عوامی نمائندے اعتماد کھو چکے ہیں، جماعت اسلامی کراچی

  عوامی نمائندے اعتماد کھو چکے ہیں، جماعت اسلامی کراچی

  

کراچی (اسٹاف رپورٹر) پبلک ایڈ کمیٹی جماعت اسلامی کراچی کی سینٹرل کیبنٹ اور تمام ضلعی صدور و ذمہ داران کا ایک اہم اجلاس مرکزی سیکرٹریٹ میں منعقد ہوا۔اجلاس میں پبلک ایڈ کمیٹی کے مختلف شعبہ جات اور اضلاع کی کارکردگی رپورٹ پیش کی گئی۔ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے پبلک ایڈ کمیٹی کراچی کے صدر سیف الدین ایڈوکیٹ نے تمام ضلعی ذمہ داران کو ہدایت کی کہ وہ جلد از جلد اپنی تنظیم سازی کے عمل کو مکمل کریں ہر گلی محلہ اور علاقہ کی سطح پر پبلک ایڈ کا نیٹ ورک موجود ہونا چاہئے، ہم اس ماہ میں کراچی کے ورکرز کا ایک بڑا کنونشن بھی منعقد کرینگے۔شہری مسائل پر بات کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ شہر کے منتخب نمائندے نا اہل ثابت ہوئے ہیں اور اپنا اعتماد کھوچکے ہیں اور اگر انہوں نے عوام کے مسائل کو حل کرنے میں دلچسپی نہیں دکھائی تو جلد ان نمائندوں کے خلاف احتسابی تحریک شروع کی جائے گی۔انہوں نے کہا کہ انتخابات کے موقع پر بڑی بڑی باتیں کرکے اور سہانے خواب دکھا کر عوام سے ووٹ لئے گئے اور اب جب کام کرنے کا وقت آیا تو ان کا سراغ ہی نہیں مل پارہا کہ کہاں روپوش ہیں سیف الدین ایڈوکیٹ نے کہا کہ کراچی کنونشن میں شہر کی قیادت کے حوالے سے ہم سخت احتسابی لائحہ عمل کا اعلان کرینگے۔اجلاس سے ابن الحسن ہاشمی،عمران شاہد اور نصیرالدین حسینی نے بھی خطاب کیا۔ پبلک ایڈ کراچی کے جنرل سیکریٹری نجیب ایوبی نے کہا کہ کراچی شہر مسائل کی آماجگاہ بنا ہوا ہے، پورا شہر بنیادی ضروریات اور سہولیات سے محروم ہے۔ ایسے میں پبلک ایڈ کے تمام ذمہ داران اپنا فرض سمجھتے ہوئے گلی محلوں میں شہریوں کے بنیادی مسائل کو حل کرنے میں ان کا ساتھ دیں، عوام کی ضروریات اور مسائل کا علم رکھیں اور ان کے حل کے لئے تمام وسائل بروئے کار لائیں۔انہوں نے کہا کہ کراچی سے منتخب ہونے والے نمائندوں نے الیکشن کے بعد اپنی شکلیں ہی نہیں دکھائیں نہ جانے کہاں غائب ہو گئے ہیں کراچی کے عوام نے جن کو ووٹ دیئے تھے وہ نا اہل ثابت ہو ئے ہیں۔ شہری مسائل کا شکار ہیں کوئی داد رسی کرنے والا موجود نہیں مگر جماعت اسلامی کے کارکن شہر کی ہر گلی اور محلہ میں دن رات موجود ہیں۔ہم عوام میں سے ہیں اور عوامی مسائل کے حل کی جدو جہد جاری رکھیں گے۔

مزید :

صفحہ آخر -