629 پاکستانی لڑکیوں کی چین میں فروخت،امریکی میڈیا کے دعویٰ پر چین کا سخت ردعمل سامنے آگیا

629 پاکستانی لڑکیوں کی چین میں فروخت،امریکی میڈیا کے دعویٰ پر چین کا سخت ردعمل ...
629 پاکستانی لڑکیوں کی چین میں فروخت،امریکی میڈیا کے دعویٰ پر چین کا سخت ردعمل سامنے آگیا

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)پاکستانی خواتین کو دلہن بناکر چین میں فروخت کئے جانے کی خبروں پر چین کا باقاعدہ موقف سامنے آگیا۔دی نیوز کی رپورٹ کے مطابق اسلام آباد میں موجود چینی سفارتخانے نے امریکی میڈیا کی رپورٹس کو بے بنیاد قراردے دیا ہے۔

امریکی نیوز ایجنسی نے دعویٰ کیا تھا کہ کم از کم 629 پاکستانی لڑکیوں کو چین میں دلہن بنا کر فروخت کیاگیا۔

امریکی نیوز ایجنسی ایسوسی ایٹڈ پریس نے گزشتہ روز اپنی ایک رپورٹ میں دعویٰ کیا تھا کہ حال ہی میں پانچ سو سے زائد پاکستانی لڑکیوں کو چین میں فروخت کیا گیاہے۔فروخت ہونے والی لڑکیوں کے ساتھ نہ صرف ناروا سلوک کیاگیابلکہ انہیں جسم فروشی کے منظم کاروبارمیں دھکیلاگیااور متعدد کے اعضا فروخت کئے گئے۔

امریکی میڈیا کی رپورٹ پر ردعمل دیتے ہوئے چینی سفارتخانے کے ترجمان نے ایک بیان جاری کیا جس میں کہا گیا کہ انہوں نے مندرجہ بالا رپورٹس کا جائزہ لیا ہے تاہم یہ پرانے اور من گھڑت الزامات کے سوا کچھ نہیں ہے۔

چینی حکومت کا موقف بیان کرتے ہوئے ترجمان نے مزید کہا کہ پاکستان میں موجود چینی سفارتخانہ ان شادیوں سے متعلق ایک بار پھراپنا موقف دہراتا ہے کہ اگر کوئی بھی تنظیم یا آرگنائزیشن شادیوں کی آڑ میں جرم کرے گی تو چینی حکومت شادی کا تحفظ اور مجرم کا محاسبہ کرے گی۔انہوں نے مزید کہا کہ مشترکہ کاوشوں سے ایسے واقعات کی روک تھام کیلئے بھرپور اقدامات کئے گئے ہیں اور مستقبل میں بھی ایسی کسی بھی صورتحال میں چین پاکستان کے ساتھ کھڑا ہوگا۔

مزید : اہم خبریں /قومی /بین الاقوامی


loading...