’بھاری رقم کی پیشکش ٹھکرا دی لیکن برہنہ نہ ہوئی‘

’بھاری رقم کی پیشکش ٹھکرا دی لیکن برہنہ نہ ہوئی‘
’بھاری رقم کی پیشکش ٹھکرا دی لیکن برہنہ نہ ہوئی‘

  



نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) بالی ووڈ کی فلم راک سٹار سے شہرت پانے والی اداکارہ نرگس فخری 16سال کی عمر سے ماڈلنگ کرتی آ رہی ہیں۔ گزشتہ دنوں ایک انٹرویو کے دوران انہوں نے ماڈلنگ کے دور میں برہنہ فوٹوشوٹ کی ایک پیشکش کے متعلق ایک راز افشا کر دیا۔ ٹائمز آف انڈیا کے مطابق امریکہ کی فحش فلموں کی سابق اداکارہ برٹنی ڈی لا مورا کے شو میں بات کرتے ہوئے نرگس فخری نے بتایا کہ ماڈلنگ کے ابتدائی دنوں میں انہیں پلے بوائے میگزین کے لیے برہنہ فوٹوشوٹ کی پیشکش ہوئی تھی جس کے عوض وہ بھاری رقم دے رہے تھے لیکن انہوں نے وہ پیشکش ٹھکرا دی۔

نرگس فخری کا کہنا تھا کہ ”وہ ان دنوں پلے بوائے میگزین کا کالج ایڈیشن شائع کرنے جا رہے تھے۔ ایک روز مجھے میرے ایجنٹ نے کہا کہ ’انہیں لڑکیوں کی ضرورت ہے جو برہنہ فوٹوشوٹ کروا سکیں۔ انہوں نے تمہارا کام دیکھ رکھا ہے اور وہ تم سے شوٹ کروانا چاہتے ہیں۔‘میں نے دیکھا کہ وہ اس کام کے عوض مجھے بہت بڑا چیک دے رہے تھے جو اس دور میں میرے لیے بہت بڑی رقم تھی لیکن میں نے انکار کر دیا۔ آپ جب ماڈلنگ کر رہے ہوتے ہو تو آپ کی حیثیت ایک ڈمی کی سی ہوتی ہے جس کو لباس پہنا کر اس کی نمائش کی جاتی ہے۔ لوگ بھی آپ کے متعلق ایسا ہی سوچتے ہیں چنانچہ اس طرح کی آفرز آتی رہتی ہیں، لیکن میں برہنہ فوٹو شوٹ کو پسند نہیں کرتی۔بالی ووڈ میں کام کرکے مجھے اس لیے بھی خوشی ملتی ہے کیونکہ وہ فلموں میں جنسی سین عکسبند نہیں کرواتے۔“

مزید : تفریح