وبا نہ ہوتی تو ان کے جلسوں کی کوئی پروا نہیں تھی:شبلی فراز 

وبا نہ ہوتی تو ان کے جلسوں کی کوئی پروا نہیں تھی:شبلی فراز 
وبا نہ ہوتی تو ان کے جلسوں کی کوئی پروا نہیں تھی:شبلی فراز 

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات نے کہا ہے کہ وبا نہ ہوتی تو ہمیں اپوزیشن کے جلسوں کی پروا نہیں تھی، پی ڈی ایم کی قیادت عوام دشمن پالیسی پر عمل پیرا ہے۔ ان میں اخلاقی جرات نہیں کہ استعفے دیں۔ اگر استعفے دیئے تونئے الیکشن کروا لیں گے۔

 وفاقی وزیر اطلاعات و نشریات شبلی فراز نے کہا ہے کہ اپوزیشن جماعتیں عوام دشمن پالیسی پرعمل پیراہیں،احتساب کےخوف سےاپوزیشن جماعتیں اکٹھی ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ اپوزیشن کوآئین تب یادآتاہےجب اقتدارنہیں ملتا،اپوزیشن جماعتوں نےکورونامیٹنگ کابائیکاٹ کیا۔ 

انہوں نے کہا کہ اپوزیشن حکومت پردباؤڈالنےمیں ناکام رہی، اپوزیشن کےپاس اخلاقی جوازنہ ہی عوامی حمایت حاصل ہے۔ان کا کہنا تھا کہ پی ڈی ایم کی 3جماعتوں پرکرپشن کےسنگین الزامات ہیں۔ 

شبلی فراز نے کہاہے کہ استعفےدیناآسان نہیں ہے، ان میں اتنی اخلاقیات نہیں کہ استعفےدیں، اگراپوزیشن ارکان استعفےدیں گےتودوبارہ الیکشن کرادیں گےکیونکہ استعفے دینا مشکل ہے، نئے الیکشن کروانا بہت آسان ہے۔ جلسے،جلوس، دھرنےدیناہم سےبہترکوئی نہیں جانتا ہے۔ان کا کہنا تھا کہ پی ٹی آئی کےپاس مینڈیٹ اوراخلاقی قوت ہے۔        وزیراعظم نےاسلاموفوبیاکامعاملہ دنیامیں اٹھایا۔

انہوں نے کہا کہ 11 پارٹیوں کاجتھہ عوام کی صحت خطرےمیں ڈال رہاہے،عام حالات نہیں ہیں،جلسوں سےلوگوں کی زندگیوں کوخطرہ ہے۔ ان کا مزید کہناتھا کہ وبانہ ہوتی توہمیں ان کےجلسوں کی پرواہ نہیں تھی،اپوزیشن رہنماکوروناسےمتعلق مضحکہ خیزبیان دےرہےہیں۔             

مزید :

علاقائی -اسلام آباد -