عمران خان کا ڈبل گیم کا بیان، چوہدری پرویز الٰہی بھی میدان میں آ گئے، مؤقف جاری کر دیا

عمران خان کا ڈبل گیم کا بیان، چوہدری پرویز الٰہی بھی میدان میں آ گئے، مؤقف ...
عمران خان کا ڈبل گیم کا بیان، چوہدری پرویز الٰہی بھی میدان میں آ گئے، مؤقف جاری کر دیا

  

لاہور (ویب ڈیسک) وزیراعلیٰ پنجاب پرویز الٰہی نے کہا ہے کہ عثمان بزدارکوبطور وزیراعلیٰ مقرر کرنے کے حوالے سے لیفٹیننٹ جنرل (ر) فیض حمید اورجہانگیرترین نے بتایا،چوہدری شجاعت کی سابق آرمی چیف سے کوئی بات نہیں ہوئی، نہ عمران خان نےڈبل گیم کھیلی ہے نہ باجوہ صاحب نے، حالات  و واقعات آپ کو ایسی جگہ پر چھوڑ دیتے ہیں کہ آپ کے پاس فیصلہ لینےکاراستہ نہیں ہوتا، فیصلہ صحیح اورغلط ہوسکتا ہے، میراخیال ہےعمران خان کابھی صحیح فیصلہ تھااورہمارااورپارٹی کا بھی صحیح تھا، صورتحال مختلف ہونے کے بعدعمران خان اوران کے ساتھیوں نے کچھ فیصلے اپنی مرضی سے کیے۔

نجی ٹی وی کو انٹرویو میں پرویز الٰہی کا کہنا تھاکہ شریفوں سے متعلق ہمیشہ خدشہ تھا وہ جھوٹ بولتے تھے، ان کے ساتھ 18 سال رہا وہ ہمارے ساتھ ہمیشہ جھوٹ بولتے تھے، میں کہتا تھا شریف مجھے کام کرنے نہیں دیں گے، میں یہ بھی کہتاتھا جوکچھ صوبے کیلئےکرنا چاہتا ہوں وہ شریف کرنےنہیں دینگے۔ادارے سے بات ہوئی تو انہوں نےکہا کہ آپ خودسوچ لیں آپ کیلئے کیا بہتر ہے؟ جب بات ہوتی ہےتوہم اداروں سے مشورہ کرتے ہیں، ادارے کوبتایا کہ عمران خان کے ساتھ ہماری کس طرح بات ہوئی ہے توکہاگیایہ عزت والا اوربہترراستہ ہے، یہ ان کی مہربانی ہےہمیں نہ بھی بتاتے توہمیں کیا کرناتھا، جتنے بھی ادارے کے سربراہ رہے ہیں سب کوسپورٹ کیا، کبھی کسی کیخلاف بیان نہیں دیا۔

انہوں نے کہا کہ مونس الٰہی نے کابینہ میں ان کوکہا تھا باجوہ نےآپ کیلئےبہت کچھ کیا، ان  کو عزت دینے سے آپ کی عزت اور بڑھے گی۔وزیراعلیٰ پنجاب کا کہنا تھاکہ لیفٹیننٹ جنرل (ر) فیض حمید کا معاملہ عجیب طرح کا تھا جس کا اختتام ان کی ریٹائرمنٹ پرہوا، وہ پنجاب کی ایڈمنسٹریشن سے متعلق میری کچھ باتیں مان لیتے تو ہمارے 4 سال ضائع نہ ہوتے، بزدارکوبطور وزیراعلیٰ مقرر کرنے کے حوالے سے لیفٹیننٹ جنرل (ر) فیض حمید اورجہانگیرترین نے بتایا۔

پرویز الہیٰ نے  کہا کہ عثمان بزدارکی وجہ سے ہمارے 4سال ضائع ہوگئے، عثمان بزدار کے والد کے ساتھ میرا تعلق تھا اس لیے اس کو ناظم بنوایا، بزدار جیسے لوگوں کو وزیراعلیٰ بنانے سے صوبہ نہیں چلتا، ان کی وجہ سے پی ٹی آئی اوراتحادیوں کوبھی نقصان ہوا۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -لاہور -