کاشتکار تربوز کی کاشت کورے کا خطرہ ختم ہونے پر کریں:ترجمان محکمہ زراعت پنجاب

کاشتکار تربوز کی کاشت کورے کا خطرہ ختم ہونے پر کریں:ترجمان محکمہ زراعت پنجاب

  

لاہور(پ ر)محکمہ زراعت پنجاب کے ترجمان کے مطابق تربوز کی فصل کی بہتر نشو و نما کے لےے موزوں درجہ حرارت 21سے 30ڈگری سےنٹی گرےڈ ہے لہٰذا کاشتکارتربوز کی فصل کی کاشت کے لئے موسم کو مدنظر رکھیں ۔ تربوز کورے کے مہلک اثر کو برداشت نہےں کرسکتا اسلئے جب کورے کا خطرہ نہ رہے تو تربوز کی کاشت کرنی چاہےے۔ تربوز کی عام فصل 15فروری سے مارچ کے آخر تک بوئی جاتی ہے اور اس فصل کا پھل جون جولائی میں برداشت کےا جاتاہے۔ترجمان نے مزید بتایا کہ تربوز کی کاشت کے لئے عام اقسام کا صحت مند بےج1کلوگرام فی اےکڑجبکہ دوغلی اقسام کا1/2کلوگرام بےج فی ایکڑ استعمال کریں۔ شوگر بے ۔بی محکمہ کی منظور شدہ قسم ہے جو نسبتاََ کم دنوں میں تےار ہوتی ہے اور ےہ اگےتی کاشت کے لےے موزوں ہے ۔

ےہ قسم پنجاب کے مےدانی علاقوں میں بہت کامےابی سے کاشت کی جاتی ہے ۔ترجمان کے مطابق تربوز گرمےوں کی اےک اہم فصل ہے۔پنجاب میں تربوز کی کاشت ضلع بہاولپور میں سب سے زےادہ کی جاتی ہے البتہ پےداوار کے لحاظ سے ضلع حافظ آبادپہلے نمبر پر آتاہے۔تربوز کا پھل بڑا رسدار اور مےٹھا ہوتاہے۔ تربوز میں پانی کی مقدار 92فےصد تک ہوتی ہے۔ اس میں بےٹا کےروٹےن ، فولک اےسڈ ، وٹامن بی وافر مقدار میں پائے جاتے ہےں جو انسانی صحت کے لےے بہت ضروری ہےں۔ تربوز کی کاشت کے لئے زرخےز رےتلی مےرازمےن جس میں پانی کا نکاس اچھا ہو موزوں ہے۔ کاشت سے اےک ماہ پہلے ہموار کی گئی زمےن میں گوبر کی گلی سڑی کھاد 15سے 20ٹن ڈالےں اور اسے ےکساں بکھےر کر ہل چلا کر زمےن میں اچھی طرح ملادےں اور کھےت کو پانی لگادےں۔ جب زمےن وتر میں آئے تو دوبارہ ہل سہاگہ چلائےں تاکہ کاشت کے وقت تک کھےت میں خودرو پودے اور جڑی بو ٹےاں اُگ آئےں۔

مزید :

کامرس -