تھکاوٹ کے باعث لوگ چہرے پر ہاتھ کیوں پھیرتے ہیں؟دلچسپ جواب

تھکاوٹ کے باعث لوگ چہرے پر ہاتھ کیوں پھیرتے ہیں؟دلچسپ جواب
تھکاوٹ کے باعث لوگ چہرے پر ہاتھ کیوں پھیرتے ہیں؟دلچسپ جواب

  

برمنگھم (نیوز ڈیسک) تھکاوٹ کی حالت میں اکثر لوگ اپنے چہرے پر ہاتھ پھیرتے اور اسے ملتے نظر آتے ہیں اور شاید آپ بھی تھکن کی حالت میں ایسا کرتے ہوں گے۔ اگرچہ اس کی ایک سادہ وجہ یہ بھی ہوسکتی ہے کہ ایساکرنا اچھا لگتا ہے مگر اصل وجہ یہ ہے کہ اس دوران ہم اکثر اپنی آنکھوں کو مسلتے ہیں اور ہمیں راحت کا احساس ہوتا ہے۔ آنکھ کے بالائی حصے میں لیکریمل گلینڈ واقع ہوتے ہیں جو ہلکے دباﺅ سے قدرے متحرک ہوجاتے ہیں اور ان سے نکلنے والے مادے آنکھ کے کارینا کو تر رکھتے ہیں۔ اس کے باعث آنکھ کا عدسہ بآسانی حرکت کرسکتا ہے اور تھکن میں کمی کا احساس ہوتا ہے۔

مزید پڑھیں :دل کی بیماریوں سے محفوظ رہنے کاآسان ترین نسخہ تحقیق میں سامنے آگیا

آنکھ میں نمی کے اضافے کے ساتھ ہی آکسیجن کے انجذاب میں بھی اضافہ ہوتا ہے اور آنکھ اور قریبی اعضاءکو راحت محسوس ہوتی ہے۔ چہرے پر ہاتھ پھیرنے سے جلد بھی متحرک ہوتی ہے اور جلدی خلیات کو تازگی کا احساس پہنچتا ہے۔ آنکھوں کو ہلکا سے مسلنے سے ان کے کونوں میں جمع میل بھی نکل جاتا ہے اور یوں مجموعی طور پر ایک اچھا احساس پیدا ہوتا ہے۔

مزید : تعلیم و صحت