ملک میں مہنگائی میں اضافے کی شرح گزشتہ گیارہ سال کی کم ترین سطح پر آ گئی

ملک میں مہنگائی میں اضافے کی شرح گزشتہ گیارہ سال کی کم ترین سطح پر آ گئی

اسلام آباد(آن لائن)حکومت نے دعویٰ کیاہے کہ ملک میں مہنگائی میں اضافے کی شرح گزشتہ گیارہ سال کی کم ترین سطح پر آ گئی ہے، رواںسال کے پہلے ماہ میں افراط زر کی شرح 3.88 فیصد رہی۔پاکستان ادارہ شماریات کے اعدادوشمار کے مطابق جولائی سے جنوری تک مہنگائی کی اوسط شرح 5.7 فیصد رہی۔ ایک ماہ کے دوران آلو کی قیمت میں 25فیصد کمی ہوئی۔ خوردنی تیل کی قیمت میں 2.3 ،چاول دو اور چینی کی قیمت میں 1.5 فیصد کمی ہوئی۔ جنوری کے دوران ٹماٹر 7.3 ، مرغی کا گوشت 5 اور دال چنا کی قیمت ، 4 فیصد بڑھ گئی۔ ایک ماہ کے دوران انڈوں میں چار فیصد بیسن ڈھائی اور جلانے کی لکڑی کی قیمت میں تین فیصد اضافہ ہوا۔ ایک سال کے دوران پیاز کی قیمت میں چونتیس فیصد کی نمایاں کمی ہوئی۔ آٹے کی قیمت میں گیارہ فیصد کی کمی ہوئی جبکہ ایک سال کے دوران سگریٹ اور تازہ پھل تیرہ فیصد مہنگے ہوئے۔ اس دوران خشک دودھ 10.6، انڈے10.4 اور شہد کی قیمت میں 10 فیصد اضافہ ہوا۔ گزشتہ ایک سال کے دوران موٹر وہیکل ٹیکس چھتیس فیصد کا اضافہ ہوا۔

مزید : کامرس