حکومت انتشار سے بچنے کیلئے جوڈیشل کمیشن بنانے میں سنجیدگی دکھائے،وسیم اختر

حکومت انتشار سے بچنے کیلئے جوڈیشل کمیشن بنانے میں سنجیدگی دکھائے،وسیم اختر

 لاہور(پ ر) امیر جماعت اسلامی صوبہ پنجاب و پارلیمانی لیڈر صوبائی اسمبلی ڈاکٹر سید وسیم اختراور سیکرٹری جنرل نذیر احمد جنجوعہ نے کہاہے کہ ملک کو مزید کسی عدم استحکام اور انتشار سے بچانے کے لئے حکومت جوڈیشل کمیشن بنانے میں سنجیدگی دکھائے۔پاکستان پہلے ہی سنگین بحرانوں کی زد میں ہے لا قا نو نیت ، بیروزگاری، مہنگائی،لوڈشیڈنگ،معاشی بد حا لی،اقرباء پروری اور دہشت گردی جیسے مسائل ملک وقوم کی ترقی اور خوشحالی کی راہ میں سب سے بڑی رکاوٹ ہیں۔ضرورت اس امر کی ہے کہ حکمران ذاتی مفادات کو ملک وقوم کے مفادات پرقربان کرناسیکھیں۔انااور ہٹ دھرمی کو ایک طرف رکھتے ہوئے پاکستان کی بقاء اور سلامتی کے لئے متحدہوکر فیصلے کرنے کی ضرورت ہے۔    انہوں نے کہاکہ دشمن پاکستان کے خلاف سازشوں میں مصروف ہے۔سی آئی اے،راء اور موساد بلوچستان سمیت پورے ملک میں اپنی مذموم کاروائیوں میں مصروف ہیں ایسے حالات میں جب ملکی سرحدوں پر دشمنوں کی شرانگیزی جاری ہوہمیں اتحادویکجہتی کامظاہرہ کرنا چاہئے۔انہوں نے کہاکہ حکومت ایک طرف پٹرولیم مصنوعات کے نرخوں میں کمی کرکے پوائنٹ سکورنگ کررہی ہے تو دوسری جانب پٹرولیم مصنوعات پر سیلز ٹیکس بڑھا کر عوام کے ساتھ گھناؤنامذاق کررہی ہے۔موجودہ حکومت ماضی کے حکمرانوں سے سبق سیکھتے ہوئے عوام کوبے وقوف بنانے کا سلسلہ بندکرے۔ پوائنٹ سکورنگ کی بجائے اشیائے خوردونوش کی قیمتوں میں کمی کر کے حقیقی معنوں میں عوام کوریلیف فراہم کیاجائے۔جماعت اسلامی پنجاب کے رہنماؤں نے مزیدکہاکہ ملک میں رشوت خورایک مافیا کی شکل اختیار کرچکے ہیں۔      عوام کو جائز کام کروانے کے لئے بھی رشوت دینی پڑتی ہے۔کرپشن کی نشاندہی کرنے والے کی حوصلہ شکنی کی جاتی ہے۔چیئرمین نیب کے مطابق ملک میں اس وقت روزانہ کی بنیاد پر8سے12ارب روپے کی کرپشن ہورہی ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 4