گجرات کنارہ ہوٹل میں محفل پر چھاپہ ،3 انسپکٹروں ، 6 رقاصاؤں سمیت7 4 افراد گرفتار

گجرات کنارہ ہوٹل میں محفل پر چھاپہ ،3 انسپکٹروں ، 6 رقاصاؤں سمیت7 4 افراد ...

 گجرات (بیورورپورٹ) گجرات کے کنارہ ہوٹل میں گزشتہ رات ایک بجے کے قریب پولیس نے شراب اور شباب کی مہندی کی ایک تقریب پر چھاپہ مار کر تین پولیس انسپکٹروں ‘ مسلم لیگ ن کے ایک مقامی ایم این اے کے بیٹے سمیت 6رقاصاؤں اور 74افراد کو گرفتار کر کے مقدمہ درج کر لیا تفصیلات کے مطابق ڈی پی او گجرات کو اطلاع موصول ہوئی کہ کنارہ ہوٹل پر مہندی کی ایک تقریب میں رات ایک بجے شراب و شباب کی محفل سجی ہوئی ہے جس پر انہوں نے ایس پی انوسٹی گیشن میاں محمد ریاض ‘ ڈی ایس پی شاہد نواز وڑائچ ‘ تھانہ بی ڈویژن ‘ تھانہ لاری اڈا ‘ تھانہ صدر گجرا ت پولیس و ایلیٹ فورس کو موقع پر بھیجا تو اس وقت مہندی کی اس تقریب کی گرما گرمی عروج پر تھی پولیس نے موقع سے انسپکٹر یوسف تارڑ‘ سب انسپکٹر شاہد حسنین گوندل ‘ پولیس ڈرائیور منظور حسین ‘ سابق ناظم حاجی اصغر تیل والا کا بھتیجا مہر عثمان‘ سمیت 74افراد کو رقاصاؤں سمیت حراست میں لے لیا موقع سے دو لاکھ روپے کی نقدی سو کے قریب موبائل فون ‘ اور پچاس گاڑیاں بھی قبضہ میں لے لیں قبضہ میں لی جانے والی گاڑیوں میں اکریت پجارو گاڑیوں کی ہے جب کہ گرفتار ہونے والوں میں اکثریت گجرات کے صنعتکاروں اور کاروباری افراد کی بیان کی جاتی ہے انسپکٹر رائے فیاض موقع سے فرار ہونے میں کامیاب ہو گیا ڈی ایس پی شاہد نواز وڑائچ کے مطابق اسلام نگر کے رہائشی ٹھیکیدار عمران چیمہ کے بھائی کی رسم مہندی کے سلسلہ میں مذکورہ مجرے کی محفل سجائی گئی تھی جس میں شراب کے نشے میں دھت 17افراد کو گرفتارکر کے طبی معائنے کے لیے ہسپتال منتقل کیاگیا ‘ ایس ایچ او تھانہ صدر فراست چٹھہ کے مطابق مذکورہ کاروائی ہوٹلو ں کی چیکنگ کے سلسلہ میں جاری ہونے والے آرڈیننس کے سلسلہ میں کی گئی اس کاروائی کے دوران لاہور اور منڈی بہاؤالدین سے تعلق رکھنے والی 6نوعمر رقاصائیں بھی پکڑی گئیں جنہیں مقامی عدالت میں پیش کرنے کے بعد جیل بجھوا دیا گیا ملزمان کے خلاف تھانہ صدر میں مقدمہ نمبر36/15بجرم ,11/4/79.294.371AB.510.4/4/79کے تحت مقدمہ درج کر لیا گیا موقع سے ساؤنڈ سسٹم بھی قبضہ میں لے لیا گیا ملزمان کو چھڑانے کے لیے گجرات کے سرمایہ داروں نے بھر پور کوشش کی مگر کسی ملزم کو بھی نہ چھوڑا گیا ۔بعد ازاں عدالت نے رقاصاؤں سمیت تمام افراد کو رہا کرنے کے احکامات دے دیے جبکہ انہیں اس مقدمہ سے بھی ڈسچارج کر دیا گیا جبکہ میڈیکل رپورٹ کے مطابق شراب پینے والے افراد کو گجرات جیل بجھوا دیا گیا عدالتی فیصلے پر 6رقاصائیں کی آنکھیں نمناک ہو گئیں اور انہوں نے اپنی رہائی پر خوشی کا اظہار کیا۔

مزید : صفحہ آخر