خصوصی عدالت کا بے نظیر قتل کیس میں 5 گواہوں کو گرفتار کر کے پیش کرنے کا حکم

خصوصی عدالت کا بے نظیر قتل کیس میں 5 گواہوں کو گرفتار کر کے پیش کرنے کا حکم

 راولپنڈی(مانیٹرنگ ڈیسک ،اے این این) انسداد دہشتگری کی خصوصی عدالت نے بے نظیر قتل کیس میں5گواہوں کو گرفتار کر کے پیش کرنے کا حکم دے دیا،ناقابل ضمانت وارنٹ جاری۔بدھ کو راولپنڈی کی اڈیالہ جیل میں انسداد دہشت گردی کی عدالت کے جج اسماعیل جوئیہ نے بے نظیر بھٹو قتل کیس کی سماعت کی، سماعت کے دوران گواہوں کے بیانات قلم بند کئے گئے تاہم کئی مرتبہ طلب کئے جانے کے باوجود 5 گواہوں اشفاق انور، جاوید اقبال، عبدالرزاق میرانی، خالد جمیل اور نثارجدون کے پیش نہ ہونے پر فاضل جج پرویز اسماعیل جوئیہ نے گواہوں کی عدم حاضری پر برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ بار بار سمن کی تعمیل کے باوجود گواہ کیوں پیش نہیں ہوتے ۔ عدالت نے ایف آئی اے ڈپٹی ڈائریکٹر خالد جمیل ، انسپکٹر ایف آئی اے نثار جدون ، انسپکٹر ایف آئی اے عبدالرزاق میرانی ، ڈی پی او جعفر آباد اشفاق انور اور سابق ایس ایس پی جاوید خان کے وارنٹ جاری کرتے ہوئے آئندہ سماعت پر گرفتار کر کے پیش کرنے کا حکم دیا ہے ۔ کیس کی سماعت نو فروری تک ملتوی کر دی گئی ۔واضح رہے کہ بے نظیر بھٹو قتل کیس میں سابق صدر پرویز مشرف سمیت 7 ملزموں پر فرد جرم عائد کی گئی ہے بے نظیر قتل کیس

مزید : صفحہ آخر