ایل این جی سے 3600 میگا واٹ بجلی حاصل ہو گی، خواجہ آصف

ایل این جی سے 3600 میگا واٹ بجلی حاصل ہو گی، خواجہ آصف

اسلام آباد (آئی این پی) وفاقی وزیر پانی و بجلی خواجہ محمد آصف نے کہا ہے کہ ایل این جی سے 3600 میگا واٹ بجلی حاصل ہو گی، پرانے تھرمل پلانٹس کو بھی ایل این جی پر منتقل کیا جائے گا، حکومت توانائی بحران کے خاتمے کیلئے جنگی بنیادوں پر کام کر رہی ہے، سرکلر ڈیٹ، کم ریکوری، پرانی بوسیدہ ٹرانسمیشن لائنیں بڑے مسائل ہیں، مقامی اور غیر ملکی سرمایہ کار ٹرانسمیشن لائن پالیسی میں بڑھ چڑھ کر حصہ لیں۔ وہ بدھ کو پرائیویٹ پاور انفراسٹرکچر بورڈ اور وزارت پانی و بجلی کے زیر اہتمام ہونے والی مشاورتی کانفرنس سے خطاب کر رہے تھے ۔ وفاقی وزیر نے کہا کہ حکومت کوئلے اور ایل این جی کے منصوبوں پر مقامی اور غیر ملکی سر مایہ کاروں نے دلچسپی کا اظہار کیا ہے، جو کہ حکومتی پالیسیوں پر اعتماد کا مظہر ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاور سیکٹر کو بہت سے مسائل کا سامنا ہے جن میں سرکلر ڈیٹ ، کم ریکوری، لائن لاسز، پرانی ٹرانسمیشن لائنیں شامل ہیں، موجودہ حکومت انہیں ترجیحی بنیادوں پر حل کرنا چاہتی ہے۔ انہوں نے شرکاء کو بتایا کہ حکومت نئی ٹرانسمیشن لائن پالیسی لا رہی ہے جس میں نجی سرمایہ کاروں کو سرمایہ کاری کا موقع ملے گا۔ انہوں نے یقین دلایا کہ حکومتی اقدامات سے صارفین اور سر مایہ کاروں کو ٹھوس ریلیف ملے گا۔ انہوں نے کہا کہ توانائی پالیسی کا مقصد موجودہ توانائی پالیسی کو بہتر بنانے کیلئے تجاویز حاصل کرنا ہے۔انہوں نے کہا کہ ایل این جی سے 3600 میگا واٹ بجلی حاصل ہو گی، موجودہ تھرمل پاور پلانٹس کو بھی ایل این جی پر منتقل کرنے سے ان کی صلاحیت میں اضافہ ہو گا اور صارفین کو سستی بجلی میسر ہو گی، حکومت توانائی بحران کے خاتمے کیلئے جنگی بنیادوں پر کام کر رہی ہے، مشاورتی کانفرنس میں ایم ڈی پرائیویٹ پاور انفراسٹرکچر بورڈ شاہ جہان مرزا نے مشاورتی کانفرنس کے شرکاء کو منصوبوں پر بریفنگ دی جبکہ سیکرٹری وزارت پانی و بجلی یونس ڈاگا نہ حکومتی اقدامات سے شرکاء کو آگاہ کیا۔

خواجہ آصف

مزید : صفحہ اول