المحمدیہ سٹوڈنٹس کے مختلف شہروں میں مظلوم کشمیریوں کے حق میں مظاہرے

المحمدیہ سٹوڈنٹس کے مختلف شہروں میں مظلوم کشمیریوں کے حق میں مظاہرے

لاہور(پ ر) المحمدیہ سٹوڈنٹس پاکستان کی جانب سے یکجہتی کشمیر کے حوالہ سے لاہور،قصور، گوجرانوالہ، فیصل آباد، شیخوپورہ، ملتان، پشاور، کراچی، کوٹلی و دیگر شہروں میں زبردست احتجاجی مظاہرے کئے گئے جن میں المحمدیہ روضہ سوسائٹی کے تحت سکولوں کے ننھے طلباء اور کالجز و یونیورسٹیز کے طلباء کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔ طلباء نے ہاتھوں میں کتبے اور بینرز اٹھا رکھے تھے جن پر مظلوم کشمیریوں کے حق میں تحریریں درج تھیں۔شرکاء کی طرف سے کشمیریوں سے رشتہ کیا ’’لاالہ الااللہ‘‘ اورکشمیر بنے گا پاکستان جیسے زوردار نعرے لگائے جاتے رہے۔ لاہور میں المحمدیہ سٹوڈنٹس کے زیر اہتمام پریس کلب کے باہر احتجاجی مظاہرہ کیا گیاجس میں سکولز، کالجز، یونیورسٹیز اور دیگر تعلیمی اداروں کے طلباء نے شرکت کی۔ احتجاجی مظاہرہ سے المحمدیہ سٹوڈنٹس پاکستان کے امیر انجینئر محمد حارث ،المحمدیہ روضہ سوسائٹی کے ناظم جنید الرحمان،یوتھ آف امۃ کے چیئرمین اسامہ شعیب،المحمدیہ سٹوڈنٹس کے جنرل سیکرٹری ثاقب مجید،المحمدیہ سٹوڈنٹس لاہور کے امیر عمر بن عبدالعزیز و دیگر نے خطاب کیا۔ المحمدیہ سٹوڈنٹس پاکستان کے امیر انجینئر محمد حارث نے کہاکہ مظلوم کشمیریوں کوحق خودارادیت ملنے تک جنوبی ایشیا میں کسی صورت امن قائم نہیں ہو سکتا۔اقوام متحدہ اور دیگر عالمی اداروں نے مسئلہ کشمیر کے حوالہ سے دوہرامعیار اپنا رکھا ہے۔ کشمیر کی محبت ہماری رگوں میں خون کی طرح دوڑتی ہے۔ مقبوضہ کشمیر میں نہتے کشمیریوں پر ظلم و ستم کے پہاڑ ڈھائے جارہے ہیں۔کشمیریوں کو بھارت کے رحم و کرم پر نہیں چھوڑ سکتے۔المحمدیہ روضہ سوسائٹی کے مسؤل جنید الرحمان،یوتھ آف امۃ کے چیئرمین اسامہ شعیب،المحمدیہ سٹوڈنٹس کے جنرل سیکرٹری ثاقب مجید،المحمدیہ سٹوڈنٹس لاہور کے امیر عمر بن عبدالعزیزنے کہا کہ جب تک بھارت مقبوضہ کشمیر سے اپنی آٹھ لاکھ فوج نہیں نکالتا۔ کشمیریوں کا ان کا حق خود ارادیت نہیں دیا جاتا اورپاکستانی دریاؤں پر سے وہ اپنا غاصبانہ قبضہ ختم نہیں کرتا اس سے کسی قسم کے مذاکرات اور معاہدات کا کوئی فائدہ نہیں ہو گا اور نہ ہی کشمیری و پاکستانی قوم ملکی مفادات کو پس پشت ڈالتے ہوئے اس قسم کے کوئی معاہدات قبول کرنے کیلئے تیار ہے۔گوجرانوالہ میں المحمدیہ روضہ سوسائٹی کی طرف سے شیرانوالہ باغ جی ٹی روڈ ، فیصل آباد میں پریس کلب کے باہر احتجاجی مظاہرے کئے گئے جن میں طلباء کی کثیر تعداد نے شرکت کی۔احتجاجی مظاہرہ سے المحمدیہ سٹوڈنٹس رابطہ تنظیم کے ناظم راشد علی ودیگر نے خطاب کیا۔ملتان میں پریس کلب کے باہراحتجاجی مظاہرہ سے المحمدیہ سٹوڈنٹس کے مرکزی رہنما محمد عثمان و دیگر نے خطاب کیا ۔المحمدیہ سٹوڈنٹس کراچی کے تحت جامعہ کراچی سے پریس کلب تک کشمیر کارواں نکالا گیا جس کے اختتام پر المحمدیہ اسٹوڈنٹس کراچی کے رہنما محمد سلیم، سابق ناظم کاشف ضیاء، حمزہ شاہد و دیگر نے بھی خطاب کیا۔ یکجہتی کشمیر کارواں میں شہر کے اسکولز، کالجز اور یونیورسٹیز سے طلبہ نے بڑی تعداد میں شرکت کی۔ کارواں میں شامل طلبہ نے پاکستان کے سبز ہلالی اور کشمیر کے پرچم اٹھا رکھے تھے۔ شرکاء پورے راستے بھارتی ظلم و تشدد کے خلاف اور مظلوم کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کے لیے زبردستی نعرے بازی کرتے رہے۔ شرکاء نے ہاتھوں میں پلے کارڈ اور کتبے بھی اٹھا رکھے تھے جن پر کشمیر پاکستان کی شہہ رگ ہے، کشمیر کے بغیر پاکستان نامکمل ہے، کشمیریوں کی قربانیاں رائیگاں نہیں جائیں گی، کشمیر میں بھارتی ظلم و تشدد پر اقوام متحدہ خاموش کیوں؟ جیسے جملے درج تھے۔پشاور میں صدر فوارہ چوک سے پشاور کلب تک کشمیر ریلی نکالی گئی جس کی قیادت المحمدیہ سٹوڈنٹس پشاورکے امیر حذیفہ سیاف نے کی ۔اس دوران پریس کلب کے باہر احتجاجی مظاہرہ میں شرکاء نے کشمیرکی آزادی کے حق میں اور بھارت کے قبضے اور مظالم کے خلاف شدید نعرہ بازی کی ۔کوٹلی میں بھی المحمدیہ سٹوڈنٹس کے یکجہتی کشمیر مظاہرے میں بھارتی پرچم نذر آتش کیا گیا ۔اس موقع پر شرکاء نے بھارت کے خلا ف شدید نعرے بازی کی۔ المحمدیہ سٹوڈنٹس کی جانب سے شیخوپورہ، قصور، خانیوال، گجرات، ٹوبہ ٹیک سنگھ، وہاڑی، سیالکوٹ، اوکاڑہ و دیگر شہروں میں بھی احتجاجی مظاہرے کئے گئے۔

مزید : صفحہ اول