قومی اسمبلی اور سینیٹ میں کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کی قرار دادیں منظور

قومی اسمبلی اور سینیٹ میں کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کی قرار دادیں منظور

اسلام آباد(اے این این،آ ن لا ئن ، ما نیٹر نگ ڈیسک) قومی اسمبلی اور سینیٹ نے کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کی الگ الگ قراردادیں متفقہ طور پر منظور کرلی ہیں۔قومی اسمبلی میں جے یو آئی(ف)کے سربراہ اور کشمیر کمیٹی کے چیئرمین مولانا فضل الرحمان نے کشمیریوں سے اظہاریکجہتی کی قرارداد پیش کی جسے متفقہ طور پر منظور کرلیا گیا۔ قرارداد میں کہا گیا ہے کہ 7 لاکھ بھارتی فوجیوں کے تسلط کے باوجود کشمیری عوام انتہائی بہادری سے اپنے حق خود ارادیت کے لئے جدو جہد کررہے ہیں، قرارداد میں مقبوضہ وادی میں قابض بھارتی فوج کی جانب سے انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزی کی مذمت کرتے ہوئے عالمی برادری سے مطالبہ کیا گیا ہے کہ وادی میں نوجوانوں کے اغوا کے بعد قتل سمیت بھارتی مظالم کا نوٹس لیا جائے۔سینیٹ مین کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کی قرارداد مسلم لیگ(ن)کے سینیٹر ایم حمزہ نے پیش کی قرار داد میں کہا گیا ہے کہ پاکستان کشمیر کے لیے اپنے اصولی موقف پر قائم ہے، سینیٹ کشمیر میں انسانی حقوق کی خلاف ورزی کی مذمت کرتا ہے، اقوام متحدہ کی قرارداد سے متعلق کشمیر میں تشہیر کرائی جائے، جسے ایوان بالا نے متفقہ طور پر منظور کرلیا۔

اسلام آباد ( مانیٹرنگ ڈیسک + اے این این )وزیر اعظم نواز شریف نے کہا ہے کہ پا کستان کشمیری عوام کی غیر متزلزل سیاسی ،سفارتی اور اخلاقی حمایت جاری رکھے گا،ہم مسئلہ کشمیر کا اقوام متحدہ کی قرار دادوں اور کشمیری عوام کی امنگوں کے مطابق حل چاہتے ہیں،مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج کی بندوقوں کے سائے میں ہونے والے نام نہادالیکشن،حق خورارادیت کا نعم البدل ہر گز نہیں ہو سکتے،پاکستانیوں اور کشمیریوں کے دل ایک ساتھ دھڑکتے ہیں،مجھے مقبوضہ کشمیر میں کم و بیش 6 ہزار گمنام اجتماعی قبروں کی دریافت سے شدید صدمہ پہنچا۔یوم یکجہتی کشمیر کے موقع پر اپنے پیغام میں انھوں نے کہا کہ پاکستان کی حکومت اور عوام کی طرف سے کشمیری بھائیوں اور بہنوں کو اپنے مستقبل کا فیصلہ خود کرنے کے پیدائشی حق ،حق خوداداریت کے لئے ان کی جدوجہد کی غیر متزلزل حمایت جاری رکھنے کا پختہ یقین دلاتا ہوں ۔اقوام متحدہ کے وعدوں اور بین الاقوامی برادری کی پیہم کوششوں کے باوجود پرعزم کشمیری عوام کو ان کا بنیادی حق دینے سے مسلسل انکار کیا جارہا ہے۔ میں کشمیریوں کے اس بہادرانہ جذبے کو خراج تحسین پیش کرتا ہوں جو گزشتہ6 دہائیوں سے زیادہ عرصہ سے سخت جابرانہ سلوک کا سامنا کرنے کے باوجود سرد نہیں پڑا۔ کشمیریوں کے بنیادی انسانی حقوق کی شدید خلاف ورزیوں نے بین الاقوامی برادری کو اس عمل کی مذمت پر مجبور کردیا ہے۔ یہ بات سب کے علم میں ہے کہ جموں و کشمیر کے بے گناہ عوام بھارتی سیکیورٹی فورسز کے7 لاکھ سے زائد اہلکاروں کے ہاتھوں انسانی حقوق کی بدترین خلاف ورزیوں کا نشانہ بن رہے ہیں ،لاکھوں کشمیری اپنی جانیں قربان کرچکے ہیں اور ہزاروں لاپتہ کردیئے گئے ہیں ۔بھارتی سیکورٹی فورسز کشمیری خواتین کی عصمت دری جاری رکھے ہوئے ہیں۔ وہ خواتین جن کے خاوند قابض افواج نے لاپتہ کردیئے کئی عشروں سے بیواؤں کی طرح بدترین اور ناقابل بیان حالات میں زندگی گزارنے پر مجبور ہیں ۔میں اور پوری پاکستانی قوم مقبوضہ کشمیر کی ہزاروں بیوہ خواتین اور یتیم بچوں کے دکھوں اور مصائب میں برابر کے شریک ہیں ۔مجھے مقبوضہ کشمیر میں کم و بیش 6 ہزار گمنام اجتماعی قبروں کی دریافت سے شدید صدمہ پہنچا۔ یہ انکشاف پوری عالمی برادری کے لئے شدید تشویش کا باعث ہے ‘ میں کشمیری عوام کو سلام پیش کرتا ہوں ‘ جنہیں اس طرح کے جابرانہ ہتھکنڈے اقوام متحدہ کے چارٹر میں درج ان کے جائز حق، حق خودارادیت کی جدوجہد سے نہیں روک سکے۔ میں اور میری حکومت مسئلہ کشمیر کے فوری حل پر زور دیتے ہیں۔ میں اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل ‘ سلامتی کونسل کے ارکان اور بین الاقوامی برادری سے پر زور مطالبہ کرتا ہوں کہ وہ بے یارو مدد گار کشمیری عوام کے مصائب کے خاتمہ کے لئے اپنا بھرپورکردار ادا کریں ۔ میں ایک بار پھر پاکستان کے اس عزم کا اعادہ کرتا ہوں کہ جموں و کشمیر کے تنازعہ کو اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کی قرار دادوں کی روشنی میں منصفانہ اور پرامن انداز میں حل کیا جائے۔ میں اس بات پر پختہ یقین رکھتا ہوں کہ مسئلہ کشمیر کے منصفانہ حل سے ہی جنوبی ایشیاء میں پائیدار امن قائم کیا جاسکتا ہے ۔ مجھے یقین ہے کہ 7لاکھ بھارتی سکیورٹی فورسز کے تسلط میں کرائے جانے والے نام نہاد انتخابات آزادانہ اور غیر جانبدارانہ حق خورارادیت کا نعم البدل ہر گز نہیں ہو سکتے ۔میں کشمیری عوام کو یقین دلاتا ہوں کہ پاکستان کے عوام ان کی غیر متزلزل حمایت ہمیشہ جاری رکھیں گے ۔میں اس بات پر بھی پختہ یقین رکھتا ہوں کہ پاکستانیوں کے دل کشمیری بھائیوں کے ساتھ دھڑکتے ہیں۔ مجھے یقین ہے کہ وہ دن دور نہیں جب کشمیری عوام اپنی منزل حاصل کرلیں گے۔

مزید : صفحہ اول