امریکی صحافی نے عراق جنگ کے دوران راکٹ لانچر سے ہیلی کاپٹر تباہی کی جھوٹی خبر پر معافی مانگ لی

امریکی صحافی نے عراق جنگ کے دوران راکٹ لانچر سے ہیلی کاپٹر تباہی کی جھوٹی خبر ...
امریکی صحافی نے عراق جنگ کے دوران راکٹ لانچر سے ہیلی کاپٹر تباہی کی جھوٹی خبر پر معافی مانگ لی

  

نیویارک (مانیٹرنگ ڈیسک) امریکہ کے مشہور اینکرز میں شمار ہونے والے ’این بی سی‘ کے برائن ولیئمز نے عراق میں راکٹ لانچر سے ہیلی کاپٹر کی تباہی کی غلط خبردینے پر معافی مانگ لی ہے ،اُنہوں نے دعویٰ کیا تھا کہ 2003 ءمیں ان کے ہیلی کاپٹر پر فائرنگ کی گئی تھی جس کے بعد اسے اترنا پڑا تھا تاہم فوج نے اس دعوے کو غلط قرار دیا تھا۔

بی بی سی کے مطابق برائن ولیئمز نے کہاکہ اُنہوں نے12 سال پرانا واقعہ سناتے ہوئے غلطی کی، وہ اس معذرت خواہ ہیں ، درحقیقت وہ نشانہ بننے سے سے پچھلے جہاز میں سوار تھے۔برائن ولیئمز نے یہ واقعہ پچھلے جمعے کو بھی دہرایا تھا اور اس ریٹائرڈ فوجی کا شکریہ ادا کیا تھا جس نے زمین پر اترنے کے بعد جہاز کے مسافروں اور عملے کی حفاظت کی تھی۔

برائن نے یہ معافی اس وقت مانگی جب ان فوجیوں نے برائن کے فیس بک پیج پر پوسٹیں کرنا شروع کر دیں کہ وہ اس ہیلی کاپٹر پر سوار نہیں تھے جس پر فائر کیا گیا تھا۔

تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ برائن کے کریئر کو اس معافی سے سخت نقصان پہنچے گا۔

یادرہے کہ یہ کوئی پہلا واقعہ نہیں ، اس سے بھی اطلاعات ہیں کہ اپنی قوم اور فوج کا مورال ہائی کرنے کے لیے اکثر جھوٹی خبر یں چلائی جاتی ہیں جس کا اعتراف بین الاقوامی اداروں کی کئی رپورٹوں میں ہوتاہے تاہم ولیئمز کے اعترافی بیان کی وجہ سے یہ واقعہ جھوٹاثابت ہوگیا ورنہ اعتراف ناپیدہی ہوتاہے ۔

مزید : بین الاقوامی