سماج دشمن عناصر کیخلاف کارروائی سے دریغ نہیں کیا جائے،ڈی پی او چارسدہ

  سماج دشمن عناصر کیخلاف کارروائی سے دریغ نہیں کیا جائے،ڈی پی او چارسدہ

  



چارسدہ (بیو رو رپورٹ) منشیات، آئس ڈرگ، ہوائی فائرنگ، جواء باز ی، قبضہ گروہ، سو د خور اور کرایہ داروں کے خلاف سخت کاروائی کی جائے۔ مجرمان اشتہاریوں کی گرفتاری کے لئے اسپیشل ٹیمیں تشکیل دینے اور نان کسٹم پیڈ گاڑیوں کے خلاف کاروائی تیز کرنے کی ہدایات۔ نیشنل ایکشن پلان کے تحت روزانہ کی بنیاد پر سرچ آپریشن یقینی بنائی جائے۔ ڈی پی او چارسدہ عرفان اللہ خان۔تفصیلات کے مطابق ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر چارسدہ عرفان اللہ خان کے زیرِ صدارت پولیس ہیڈ کوارٹرز میں ایک اعلیٰ سطحی میٹنگ منعقد ہوئی۔ میٹنگ میں ایس پی انوسٹی گیشن چارسدہ افتخار شاہ خان، ڈی ایس پی سٹی تاج محمد خان، ڈی ایس پی شبقدر محمد ریاض خان، ڈی ایس پی سرڈھیری عدنان اعظم خان،ڈی ایس پی تنگی فضل شیر خان اور ڈی ایس پی ہیڈ کوآرٹرز شہنشاہ گوہر خان نے شرکت کی۔ میٹنگ کے دوران ضلع بھر میں امن وامان کی مجموعی صورتحال،جرائم کی شرح اور تھانوں میں درج مقدمات کی تفتیشی امور کا تفصیلی جائزہ لیا گیا۔میٹنگ میں منشیات اور مجرمان اشتہاری کے خلاف جاری کمپئن کا جائزہ لیا گیا جس میں سرکل سرڈھیری نے پہلی پوزیشن حاصل کرتے ہوئے جاری کمپیٗن میں 161مجرمان اشتہاری، سرکل تنگی نے 134 دوسری پوزیشن، سرکل شبقدر 130 تیسری جبکہ سرکل سٹی نے 78 مجرمان اشتہاریوں کو پابند سلال کرکے چوتھی پوزیشن حاصل کی۔ اسی طرح منشیات کے خلاف پہلی پوزیشن سرکل شبقدر نے37366 گرام چرس جبکہ 608گرام ہروئین اور 20101گرام آئس، دوسری پوزیشن سرکل سٹی نے 30150 اور تیسری پوزیشن سرکل سرڈھیری نے 30035گرام منشیات برآمد کرکے حاصل کر لی۔ڈی پی او چارسدہ عرفان اللہ خان نے کہا کہ منظم جرائم کی بیخ کنی اور پیشہ ورانہ فرائض کی انجام دہی کے دوران پولیس کو درپیش چیلنجز سے بہتر طور پر نبردآزما ہونے کیلئے مشترکہ اور ہمہ گیر پالیسی وضع کرلی گئی ہے۔میٹنگ میں پولیس افسران پر زور دیا گیا کہ انسپکٹر جنرل آف پولیس خیبر پختونخوا ڈاکٹر ثناء اللہ عباسی کے واضح احکامات کی روشنی میں ضلع بھر میں منظم جرائم پیشہ گروہوں اور سنگین جرائم میں ملوث مجرموں کے خلاف سخت کریک ڈاؤن یقینی بنایا جائے۔خاص طور پر ان مگر مچھوں پر مضبوط ہاتھ ڈالا جائے جو مختلف مافیا کے سرغنے ہیں ان میں باالخصوص قبضہ گرپوں کے وہ عناصر جو لینڈ مافیا میں ملوث ہیں۔ ڈرگ مافیا بالخصوص وہ مجرم جو آئس جیسے خطرناک ڈرگ کی تیاری اور نئی نسل کو اس لعنت میں مبتلا کرنے میں ملوث ہیں۔سود خور و بھتہ خور جنہوں نے شریف شہریوں کی زندگی اجیرن کردی ہے۔ڈی پی او چارسدہ نے کہا کہ ضلع میں سکول، کالجزاور یونیورسٹی کی سیکیورٹی کو یقینی بنایا جائے۔اس موقع پر ڈی پی او چارسدہ عرفان اللہ خان منشیات اور مجرمان اشتہاری کے خلاف جاری کمپیئن میں بہترین کارکردگی پر ایس پی انوسٹی گیشن چارسدہ افتخار شاہ خان، ڈی ایس پی سرڈھیری عدنان اعظم خان، ڈی ایس پی تنگی فضل شیر خان، ڈی ایس پی شبقدر محمد ریاض خان،ڈی ایس پی سٹی تاج محمد خان اور ڈی ایس پی ہیڈ کو آرٹرز شہنشاہ گوہر خان نقد انعامات اور توصیفی سرٹیفکیٹس دئیے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر