کوہاٹ،قتل ڈکیتیوں میں ملوث ماسٹر مائنڈ گرفتار،مال برآمد

  کوہاٹ،قتل ڈکیتیوں میں ملوث ماسٹر مائنڈ گرفتار،مال برآمد

  



کوہاٹ(بیورورپورٹ)کوہاٹ پولیس نے خونی رہزنی اورڈکیتی کی وارداتوں میں ملوث ماسٹر مائنڈ ملزم کو گرفتار کرلیا ہے۔زیر حراست ملزم کے قبضے سے لوٹا ہوا مال بھی برآمد کرلیا گیا ہے۔پکڑا گیا ملزم ایک ہی رات میں راہ چلتے شہری، جنرل سٹور اورپی سی او کی دکان سے نقدی،موبائل فونز اور دیگر قیمتی سامان لوٹنے کی وارداتوں کے دوران مزاحمت پر عدالتی اہلکار سمیت دو افراد کو گولی مار کر موت کے گھاٹ اتارنے کے بعد فوری طور پرفرار ہوگیا تھا۔ملزم سابقہ ریکارڈ یافتہ جرائم پیشہ ہے جسکے خلاف مختلف نوعیت کی جرائم کے مقدمات پہلے بھی درج ہیں اور کئی مرتبہ جیل کی سزاء بھی کاٹ چکا ہے۔گرفتار ملزم نے رہزنی اور ڈکیتی کی متعدد وارداتوں اور مزاحمت پر شہریوں کو گولی مارنے کا اعتراف جرم کرلیا ہے۔ڈی ایس پی سٹی بشیر داد خان اور ڈی ایس پی ہیڈ کوارٹر صنوبر شاہ نے گزشتہ روز سٹی پولیس کی جانب سے خونی رہزنی اور ڈکیتی کی وارداتوں میں ملوث ماسٹر مائنڈ ملزم کی گرفتاری کے حوالے سے حاصل کی گئی کامیابیوں پرخصوصی پریس کانفرنس کرتے ہوئے بتایا کہ پولیس کی جانب سے عوام کی جان ومال کی حفاظت کو یقینی بنانے کی خاطر تمام وسائل بروئے کار لائے جارہے ہیں۔انہوں نے بتایا کہ 22جنوری کی رات کو تھانہ جنگل خیل اور تھانہ سٹی کی حدود میں رہزنی اور ڈکیتی کی وارداتوں اور مزاحمت پر شہریوں کو گولی مارنے کے واقعات رونما ہوئے جسمیں جنگل خیل کے علاقہ چار باغ میں شاہد نامی ایک دکاندار کو ڈکیتی کی واردات کے دوران گولی مار کر زخمی کردیا گیا جو بعد ازاں زخموں کی تاب نہ لاکر پشاور کے ہسپتال میں دم توڑ گیا جبکہ اسی رات شہر کے علاقہ کالو خان بانڈہ روڈ پربازار سے گھر جانیوالے مقامی عدالت کے نائب قاصد مقصود خان کو بھی خونی رہزنی کی واردات میں نقدی چھیننے کے دوران مزاحمت پر فائرنگ کرکے موت کے گھاٹ اتاردیا گیا۔ڈی ایس پی نے بتایا کہ یکے بعد دیگرے رہزنی اور ڈکیتی کی پے در پے وارداتوں کے تسلسل میں کچھ ہی دیر بعد شہر کے علاقہ گڑھی مواز خان چوک میں واقع پی سی او کی دکان میں بھی اسلحہ کی نوک پر ڈکیتی کی اسی نوعیت کی واردات برپا کی گئی جسمیں پی سی او کے مالک سے چالیس ہزار روپے کی نقدی،ایک موبائل فون سیٹ اور وہاں موجود گاہک سے موبائل فون سیٹ لوٹ لیا گیا اور نقاب پوش ملزم موٹر سائیکل پر جائے واردات سے فرار ہوگیا۔ڈی ایس پی نے بتایا کہ رہزنی اور ڈکیتی کی ان وارداتوں کا سخت نوٹس لیتے ہوئے ڈی پی او کوہاٹ کیپٹن(ر)منصور امان نے ایس پی آپریشنزطاہر اقبال اور انکی مشترکہ سربراہی میں سراغ رساں ٹیم تشکیل دی جسمیں ایس ایچ او سٹی فیاض خان،ایس ایچ او جنگل خیل نیاز محمد،انوسٹی گیشن آفیسر انور شاہ اور دیگر ماہر پولیس افسران بھی شامل کئے گئے اور انہیں واردات میں ملوث ملزمان کی فوری گرفتاری کا ٹاسک سونپ دیا گیا۔ڈی ایس پی بشیر داد خان نے بتایا کہ رہزنی اور ڈکیتی کی ان وارداتوں میں مطابقت پائے جانے کے پیش نظر ٹربل پوائنٹس کی نشاندہی کرتے ہوئے اس بار ایک نئی حکمت عملی اپنائی گئی جسکے دوران سی سی ٹی وی فوٹیج اور دیگر مخصوص شواہد قبضے میں لئے گئے اورباریک بینی سے سائنسی تجزیات کی روشنی میں اہم کامیابی حاصل کرتے ہوئے خونی رہزنی اور ڈکیتی کی ان وارداتوں میں ملوث ماسٹر مائنڈ ملزم سلیمان ولد رئیس خان سکنہ محلہ شنواری جنگل خیل کوایک کامیاب چھاپہ مار کاروائی کے دوران گرفتار کرکے انکے قبضے سے واردات میں استعمال ہونیوالی موٹر سائیکل اور لوٹا ہوا سارا مال برآمد کرکے قبضے میں لیا گیا۔ڈی ایس پی نے بتایا کہ ابتدائی پوچھ گچھ میں زیر حراست ملزم نے ڈکیتی اور رہزنی کی ان وارداتوں اور مزاحمت پرشہریوں کو گولی مارنے کا اعتراف جرم کرلیا ہے۔ڈی ایس پی نے مزید بتایا کہ گرفتار ملزم نشے کا عادی اورسابقہ ریکارڈ یافتہ جرائم پیشہ ہے جسکے خلاف رہزنی،منشیات اور اس قسم کی دیگر جرائم کے مقدمات تھانہ جنگل خیل میں درج ہیں اور جرائم کی پاداش میں ملزم کئی بار جیل کی سزاء کاٹ چکا ہے۔انہوں نے بتایاکہ تھانہ سٹی اور تھانہ جنگل خیل میں خونی رہزنی اور ڈکیتی کی درج ان مقدمات میں گرفتار ملزم سلیمان کو باضابطہ طور پر نامزد کردیا گیا ہے جن سے دوران تفتیش مزید بھی اہم انکشافات متوقع ہیں۔

مزید : پشاورصفحہ آخر