پشاور چڑیا گھر،جنوبی افریقہ سے برآمد شدہ ہاتھی کا کیس نمٹا دیا گیا

  پشاور چڑیا گھر،جنوبی افریقہ سے برآمد شدہ ہاتھی کا کیس نمٹا دیا گیا

  



پشاور(نیوزرپورٹر)پشاورہائی کورٹ نے وفاقی حکومت کی جانب سے خیبرپختونخواکے سب سے بڑے پشاور چڑیا گھرکیلئے جنوبی افریقہ ہاتھی برآمد کرنے کی اجازت نہ دینے کے خلاف دائر رٹ پر سماعت کے دوان وفاقی اور صوبائی حکومت نے معاملہ انٹرنیشنل اینیمل کمیٹی کے ساتھ اٹھانے کی یقین دہانی پر عدالت نے کیس نمٹا دیا کیس کی سماعت جسٹس قیصر رشید اور جسٹس عبدالشکور پرمشتمل دو رکنی بنچ نے کی، درخواست گذار ٹھیکیدارحنیف خان کے مطابق حکومت کی جانب سے قانونی ضابطے پورے کئے جانے کے باوجود ہاتھیوں کیلئے درآمدی این او سی جاری کرنے سے انکار کر دیا گیاہے جس پراسکے 92ملین روپے ڈوبنے کاخدشہ پیدا ہوگیا عدالت میں وفاقی سیکرٹری موسمیاتی تغیر، صوبائی سیکرٹری موحولیات اور ایڈیشنل ایڈوکیٹ جنرل سید سکندر حیات شاہ، ڈائریکٹر چڑیا گھر اور ڈپٹی اٹارنی جنرل اضغر کنڈی عدالت میں پیش ہوئے اے اے جی سید سکندر شاہ نے عدالت کو بتایا کہ صوبائی حکومت وفاق کو کل تک ریفرنس بھیجے گا ڈپٹی اٹارنی جنرل نے عدالت کو بتایا کہ صوبائی حکومت ریفرنس بھیجے گا تو اس کے بعد وفاق اس معاملے کو انٹرنیشنل اینمل کمیٹی کے ساتھ اٹھائے گی جس پر جسٹس قیصر رشید نے کہا کہ وفاقی حکومت کتنا ٹائم لے گی، کب تک اس کو حل کریں گے جس پر عدالت میں موجود، وفاقی سیکرٹری موسمیاتی تغیر نے عدالت کو بتایا کہ ہم اس معاملے کو ترجیحی بنیادوں پر جتنا جلدہو حل کریں گے ایک مہینے میں اس کو حل کرنے کی کوشش کریں گے عدالت نے وفاقی اور صوبائی حکومت کا معاملہ انٹرنیشنل اینیمل کمیٹی کے ساتھ اٹھانے کی یقین دہانی پر عدالت نے کیس نمٹا دی۔

مزید : پشاورصفحہ آخر