لیپہ سیکٹر، بلا اشتعال فائرنگ، دوخواتین اور بچے سمیت 4افراد زخمی

لیپہ سیکٹر، بلا اشتعال فائرنگ، دوخواتین اور بچے سمیت 4افراد زخمی

  



اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک، نیوزایجنسیاں) کنٹرول لائن کے لیپہ سیکٹر پر بھارتی فوج کی بلااشتعال فائرنگ سے دو خواتین اور ایک بچے سمیت 4افراد زخمی ہوگئے۔ بھارتی فوج نے مارٹر گولوں اور بھاری ہتھیاروں کا استعمال کرتے ہوئے جان بوجھ کر شہر ی آبادی کو نشانہ بنایا ہے۔دوسری طرف ترجمان دفتر خارجہ کے مطابق بھارتی ہائی کمیشن کے اعلیٰ سفارتی اہلکار کو دفتر خارجہ طلب کر کے ایل او سی پر بھارتی فوج کی بلااشتعال فائرنگ پر شدید احتجاج کیا گیا ہے۔ بھارتی فوج نے ایل او سی پر جان بوجھ کر شہر ی آبادی کو نشانہ بنایا۔ شہری آبادی کو نشانہ بنانا بھارتی فوج کا احمقانہ عمل ہے۔ بھارت مسلسل سیز فائر کی خلاف ورزیاں کررہا ہے۔ پیر کے روز بھارتی فوج کی بلااشتعال فائرنگ سے دو خواتین اور ایک بچے سمیت 4افراد زخمی ہوگئے تھے۔

کنٹرول لائن

سرینگر(این این آئی)مقبوضہ کشمیر میں بھارتی پولیس نے ضلع پلوامہ کے مختلف علاقوں سے بارہ سے زائد کشمیری نوجوانوں کو گرفتار کرلیا ہے۔کشمیرمیڈیاسروس کے مطابق ان نوجوانوں کو ضلع کے علاقوں کریم آباد، کاک پورہ اور اونتی پورہ سے تلاشی اور محاصرے کی کارروائیوں اور گھروں پر چھاپوں کے دوران گرفتار کیاگیا۔بھارتی پولیس کے ایک اہلکار نے میڈیا سے گفتگو میں دعویٰ کیا ہے کہ گرفتار کئے گئے نوجوانوں میں سے متعدد جاری جدوجہد آزادی میں سرگرم کردار ادا کر رہے تھے۔ ان علاقوں سے تعلق رکھنے والے افراد نے میڈیا کو بتایا کہ بھارتی فورسز نے تلاشی اور محاصرے کی نام نہاد کارروائیوں کے دوران لوگوں میں خوف وہراس پیدا کردیا ہے جس سے ان کے معمولات زندگی بری طرح متاثر ہورہے ہیں۔ادھر بھارتی تحقیقاتی ادارے این آئی اے نے بھارتی سنٹرل ریزرو پولیس فورس اور پولیس اہلکاروں کے ہمراہ کپواڑہ، پلوامہ اور شوپیاں کے اضلاع میں متعدد مقامات پر چھاپے مارے۔دریں اثنا بھارتی فوجیوں نے سرینگر، گاندربل، بڈگام، کپواڑہ، بانڈی پورہ، بارہمولہ، اسلام آباد، پلوامہ، شوپیاں، کولگام، رام بن، کشتواڑ، ڈوڈاہ اور سنبل کے اضلاع میں تلاشی اور محاصرے کی کارروائیاں جاری رکھیں۔علاوہ ازیں وادی کے ضلع اسلام آباد میں بھارتی فوج کی ایک تیز رفتار گاڑی کی ٹکر سے ایک خاتون اور ایک بچی سمیت پانچ افراد شدید زخمی ہو گئے ہیں۔ کشمیر میڈیاسروس کے مطابق ضلع کے علاقے وان گنڈ قاضی گنڈ میں بھارتی فوج کی ایک تیز رفتار گاڑی کی دانستہ طورپر ایک کا رسے ٹکر کے نتیجے میں پانچ افراد کو شدید زخمی ہو گئے۔ ایک پولیس افسر نے واقعے کی تصدیق کرتے ہوئے کہاہے کہ تمام زخمی افراد کو ایمرجنسی ہسپتال قاضی گنڈ منتقل کردیا گیا ہے جہاں سے ایک شدید زخمی کو ایس ایم ایچ ایس ہسپتال سرینگر منتقل کیاگیا ہے۔مزید برآں مقبوضہ کشمیرمیں جموں و کشمیر سٹوڈنٹس اینڈ یوتھ فورم نے مقبوضہ علاقے میں بھارتی فوج کے مظالم اور میڈیا پر عائد مسلسل قدغن کے خلاف سرینگر اور سوپور سمیت مختلف مقامات پر احتجاجی مظاہرے کیے۔کشمیرمیڈیاسروس کے مطابق پارٹی کے کارکنوں نے آزادی کے حق میں اور بھارت خلاف نعرے بلند کئے اورمختلف مقاما پر پوسٹر آویزاں کئے جن پربھارت کے غیر قانونی تسلط کے خلاف مزاحمت جاری رکھنے پر زوردیاگیا تھا۔

مقبوضہ کشمیر

مزید : صفحہ اول