سیاچن میں بھارتی فوجیوں کولباس،غذاکی شدید قلت کا سامنا

  سیاچن میں بھارتی فوجیوں کولباس،غذاکی شدید قلت کا سامنا

  



نئی دہلی (مانیٹرنگ ڈیسک) دنیا کے بلند ترین محاذ سیاچن پر بھارتی فوج کو سہولیات کی عدم ادائیگی کا سچ بھارتی میڈیا سامنے لے آیا، فوجیوں کے پاس لباس ہے نہ ہی بہتر غذا جبکہ چشموں کی بھی 98 فیصد تک قلت ہے۔ چار سال سے نئی وردیاں بھی نہیں ملیں۔بھارتی میڈیا کے مطابق کامپٹرولر اینڈ آڈیٹر جنرل آف انڈیا (سی اے جی) نے ایک رپورٹ میں کہا ہے کہ سیاچن سمیت مختلف برفیلے علاقوں میں تعینات بھارتی فوجیوں کو موسم سرما کے خصوصی لباس، دیگر لوازمات اور غذا کی شدید قلت کا سامنا ہے۔خبر رساں ادارے کے مطابق سی اے جی نے پارلیمان میں اپنی رپورٹ پیش کی ہے جس میں اس نے فوج کو سخت تنقید کا نشانہ بنایا ہے۔رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ فوج بلندی پر تعینات اپنے فوجیوں کو مخصوص لباس، راشن اور رہنے کی مناسب جگہ مہیا کرانے میں ناکام رہی ہے۔وزارت دفاع نے کامپٹرولر اینڈ آڈیٹر جنرل آف انڈیا (سی اے جی) کو بتایا ہے کہ ان خامیوں کو دور کیا جائے گا کانگریس رہنما سوپریا سولے نے ٹویٹ کی کہ سی اے جی کی رپورٹ کے مطابق سیاچن، لداخ اور ڈوکلام میں فوجیوں کو مناسب کھانا، کپڑے اور ضروری سامان نہیں مل رہا اور 2015 سے ہمارے فوجیوں کو جوتے تک نہیں ملے ہیں۔

سیاچن

مزید : صفحہ اول