چیف جسٹس کی سکیورٹی کیلئے خط لیک ہونے کا معاملہ اہم قرار

چیف جسٹس کی سکیورٹی کیلئے خط لیک ہونے کا معاملہ اہم قرار

  



لاہور(نامہ نگارخصوصی)لاہورہائی کورٹ نے چیف جسٹس پاکستان کی سکیورٹی سے متعلق خط لیک کرنے کے خلاف کیس میں ایڈووکیٹ جنرل پنجاب کو طلب کرتے ہوئے استفسار کیاہے کہ نوٹیفکیشن کوسوشل میڈیاپرلیک کیا گیا توپھرسکیورٹی کہاں گئی؟بتایاجائے بلیوبک کے مطابق چیف جسٹس پاکستان کی سیکیوٹی کیا ہے،ایک ادارے نے دوسرے کو خط لکھا،پھر نوٹیفکیشن میں چیف جسٹس پاکستان کی ہدایت کہاں سے آگئی؟یہ اہم معاملہ ہے اسے نظرانداز نہیں کیا جاسکتا،درخواست گزار کے وکیل اظہر صدیق نے موقف اختیار کیا کہ رجسٹرار سپریم کورٹ نے سکیورٹی کے لئے معمول کا خط جاری کیا،آئی جی آفس سے جاری نوٹیفکیشن میں کہا گیا کہ چیف جسٹس پاکستان کی ہدایت پر سکیورٹی فراہم کی جائے، پھر اس نوٹیفکیشن کو بدنیتی سے سوشل میڈیا پر لیک بھی کردیاگیا۔چیف جسٹس لاہورہائی کورٹ مامون رشید شیخ نے دوران سماعت ریمارکس دیئے کہ اس کیس میں متعلقہ افسروں کو بلایا اورلارجر بنچ بھی تشکیل دیا جاسکتاہے تاہم عدالت نے ایڈووکیٹ جنرل پنجاب کو ہدایت لے کرپیش ہونے کی ہدایت کرتے ہوئے کیس کی مزید سماعت ملتوی کردی۔

خط لیک

مزید : صفحہ آخر