تھانیدار نے رشوت مانگ لی، نومسلم خاندان کااحتجاج، بچے فروخت کرنیکا اعلان

  تھانیدار نے رشوت مانگ لی، نومسلم خاندان کااحتجاج، بچے فروخت کرنیکا اعلان

  



رحیم یار خان (بیوروپورٹ)محنت کش نے تھانے دار کو رشوت ادا کرنے کی خاطر بچے برائے فروخت کے بینرز اٹھا کر پریس کلب پہنچ گیا۔بیوی بچوں سمیت پریس کلب کے باہر احتجاجی مظاہرہ،احتجاجی مظاہرین نے بچے برائے فروخت کے بینرز اٹھا رکھے تھے، احتجاج لیاقت پور کے تھانید دار مقصود کے خلاف کیا گیا تفصیل کے مطابق لیاقت پور کے نو مسلم خاندان نے پریس کلب کے باہر احتجاج کرتے ہوئے بچے برائے فروخت کے بینرز اٹھا رکھے ہیں۔ مظاہر (بقیہ نمبر46صفحہ7پر)

کرنے والے لیاقت پور 20والی کالونی کے رہاشی شبیر احمد میڈیا کو بتایا کہ اس نے اپنی فیملی کے ہمراہ سات سال قبل اسلام قبول کرکے ڈھرکی سے لیاقت پور منتقل ہو گیا ہے اور یہاں پر وہ کچرا چننے کا کام کر رہا ہے۔مظاہرین نے الزام عائد کیا کہ مقصود تھانہ دار نے لاکھوں روپے رشوت وصول کر لی ہے اب اور رشوت مانگتا ہے میں اپنے بچے سڑک پر لے آیا ہوں تاکہ بچے فروخت کرکے میں ASIکو رشوت دے سکوں،مزید کہا ہے کہ مجھے میرے رشتہ داران Asiسے ملکر ذلیل و خوار کروا رہے ہیں،علاقے کی با اثر شخصیات طارق چٹہ، بگا وغیرہ کی ایما پر تھانے دار مقصود احمد نے ان کا جینا محال کر رکھا ہے جھوٹے مقدمات میں پھنسانے کی مد میں اس نے 50ہزار روپے رشوت بھی وصول کی ہے اور اب ہر ماہ بھاری رشوت کا مطالبہ کرتا ہے۔شبیر احمد نے کہا کہ وہ مزدورری کر کے اپنے بچوں کا پیٹ پالتا ہے وہ ہر ماہ رشوت نہیں دے سکتا،گزشتہ روز بھی تھانے دار مقصود نے بھاری رشوت کا مطالبہ کیا ہے اور کہا ہے اگر رقم نہ دی تو تمھارا نام کسی ڈکیتی کے مقدمہ میں ڈال دے گا،جس پر شبیر احمد اپنے بچے فروخت کرنے پریس کلب پہنچ گیا۔ مظاہرین نے ڈی پی او سے مطالبہ کیا ہے کہ تھانے دار مقصود سے جان چھوڑوائی جائے اور اس کے خلاف قانونی کاروائی عمل میں لائی جائے۔

اعلان

مزید : ملتان صفحہ آخر