غیرقانونی شکارپرچالان،سابق ایم این اے کاوائلڈلائف ٹیم پرحملہ

غیرقانونی شکارپرچالان،سابق ایم این اے کاوائلڈلائف ٹیم پرحملہ

  



لیاقت پور(نمائندہ پاکستان) غیر قانونی شکار کھیلنے پر چالان کرنے کے بعد۔سابق ایم این اے نے اپنے بیٹے اورمتعدد افراد کے ہمراہ وائلڈ لائف ٹیم پر حملہ کامطالبہ تین ملازمین کو زخمی کر دیا لاکھوں روپے نقدی موبائل بھی چھین کر لے گئے تفصیلات کے مطابق خان پور کے سابق ایم۔این اے میجر ریٹائرڈ سید تنویر احمد شاہ کا دو ماہ قبل چولستان کی وائلڈ لائف(بقیہ نمبر41صفحہ12پر)

ٹیم نے غیر قانونی شکار کھیلنے پر ان کا چالان کر دیا تھا جسکی رنجش کی بنا پر انہوں نے دو روز قبل اپنے بیٹے علی تنویر بادل جونہ۔امین لاڑ و دیگر12 / 13 مسلع افراد کے ہمراہ جیپوں پر سوار ہوکر وائلڈ لائف کے کیمپ شادی والا ڈہر پہنچے جہاں موجود سپروائزر غلام یسین۔محمد ابراہیم۔ محمد خمیسہ۔کو یرغمال بنا کر انہیں حکم دیا کہ آپ فوری طور پر موبائل پر وائلڈ لائف انسپکٹر اللہ نواز کو بلائیں کہ ہم نے شکاری پکڑے ہوئے ہیں اطلاع پر اللہ نواز انسپکٹر اپنے دیگر عملہ کے ہمراہ موقعہ پر پہنچا تو سید تنویر احمد اس کے بیٹے و دیگر افراد نے اسلحہ کے زور پر انہیں بھی یرغمال بنا کر تشدد کا نشانہ بنایا ان ملازمین کے موبائل چھین لئے۔ اور ایک لآکھ 91 ہزار کے قریبی رقم انکی جیبوں سے نکل گئے اور بعد ازاں سرکاری وائرلیس سیٹ کی تاریں کاٹ اور سرکاری گاڑیوں کے ٹائروں سے ہوا نکال کر جیپوں پر سوار ہو کر نکل گ?۔ وجہ بتائی جاتی ہے کہ وائلڈ لائف انسپکٹر اور اس کے عملہ نے تقریبآ دو ماہ قبل میجر ریٹائرڈ سید تنویر احمد کا غیر قانونی شکار کھیلنے پر چالان کیا تھا جس کی رنجش پر یہ قدم اٹھایا گیا اطلاع پر وائلڈ لائف کے متعدد افسروں اور اہکاروں نے وہاں پہنچ کر تمام زخمیوں کو شیخ زید ہسپتال رحیم یار خان داخل کرایا جبکہ پولیس تھانہ تبسم شہید نے تمام ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کر لیا ہے۔

حملہ

مزید : ملتان صفحہ آخر