مسئلہ کشمیر ابھی نہیں تو کبھی نہیں جے مرحلے میں داخل ہو گیا: سراج الحق

مسئلہ کشمیر ابھی نہیں تو کبھی نہیں جے مرحلے میں داخل ہو گیا: سراج الحق

  



لاہور (آن لائن) امیر جماعت اسلامی سینیٹر سراج الحق نے کہاہے کہ قوم5فروری کو جوق در جوق گھروں سے نکلیں اور یکجہتی کشمیر ریلیوں میں شرکت کریں، کشمیر حکمرانوں کا نہیں، پاکستانی قوم اور پاکستان کا مسئلہ ہے۔ عالمی استعمار کے غلام حکمرانوں کی اپنی مجبوریاں ہیں جو انہیں کھل کر مظلوم کشمیریوں کا ساتھ دینے سے روک رہی ہیں لیکن قوم آزاد و خود مختار ہے جسے مظلوم کشمیریوں کے حق میں آواز بلند کرنے (بقیہ نمبر15صفحہ12پر)

سے کوئی نہیں روک سکتا۔ 5 فروری یوم یکجہتی کشمیر پر قوم کے نام اپنے پیغام میں سراج الحق نے کہاکہ وزیراعظم کے منہ سے ٹیپو سلطان بننے اور دنیا میں عزت و وقار سے رہنے کی باتیں سن کر پوری قوم میں خوشی او ر اطمینان کی لہر دوڑ گئی تھی لیکن 27 ستمبر کی اقوام متحدہ میں تقریر کے بعد سے وزیراعظم ایسے خاموش ہوئے ہیں جیسے اس تقریر سے ان کا کوئی واسطہ ہی نہ ہو۔ کشمیر عالمی سطح پر تسلیم شدہ متنازعہ علاقہ ہے اگر بھارت کشمیر میں فوجیں بھیج سکتاہے تو پاکستان کیوں نہیں۔ انہوں نے کہاکہ مسئلہ کشمیر ابھی نہیں تو کبھی نہیں کے مرحلے میں داخل ہو گیاہے۔ پاکستان کی بقا، سا لمیت اور حفاظت کشمیر کی آزادی سے مشروط ہے۔ چھ ماہ سے کشمیرمیں بدترین کرفیو ہے۔ 80 لاکھ کشمیری دنیا کی سب سے بڑی جیل میں بند ہیں۔ حریت قیادت اور ہزاروں کشمیریوں کو جیلوں میں بدترین ظلم و تشدد کا نشانہ بنایا جارہا ہے۔ہزاروں خواتین کی عصمت دری کی گئی ہے۔ شدید سردی اور برف باری میں کشمیریوں کو بنیادی ضروریات زندگی بھی میسر نہیں، بیماروں کے لیے ادویات اور معصوم بچوں کے لیے دودھ تک نہیں۔ ہر گلی کے موڑ اور چوک میں بھارتی فوجی کھڑے ہیں۔ انہوں نے کہاکہ 5اگست کے بھارتی اقدام کے بعد اقوام متحدہ، عالمی برادری اور خصوصاً پاکستانی حکمرانوں کا فرض تھاکہ کشمیریوں کے ساتھ کھڑے ہوتے۔ بھارت نے کشمیر کی خصوصی حیثیت ختم کر کے عالمی قوانین اور اقوام متحدہ کی قرار دادوں کو پامال کیا۔

سراج الحق

مزید : ملتان صفحہ آخر