مسئلہ کشمیرپرامریکی ثالثی کے خطرناک نتائج ہوں گے،وزیراعظم آزاکشمیر

مسئلہ کشمیرپرامریکی ثالثی کے خطرناک نتائج ہوں گے،وزیراعظم آزاکشمیر
مسئلہ کشمیرپرامریکی ثالثی کے خطرناک نتائج ہوں گے،وزیراعظم آزاکشمیر

  



مظفرآباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)وزیراعظم آزادکشمیر راجہ فاروق حیدر نے کہاہے کہ ثالثی کبھی کشمیریوں کے حق میں نہیں ہوسکتی،امریکا کی ثالثی ہمارے فائدے میں نہیں ہوگی،مسئلہ کشمیرپرامریکی ثالثی کے خطرناک نتائج ہوں گے،امریکا کی ثالثی نے فلسطین کے ساتھ جو کیا اس کو سب نے دیکھا ہے ۔

تفصیلات کے مطابق یوم کشمیر پر مظفرآباد آزادکشمیر قانون ساز اسمبلی کا خصوصی اجلاس ہوا،وزیراعظم عمران خان نے آزادکشمیر قانون ساز اسمبلی کے اجلاس میں شرکت کی،وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی اور علی امین گنڈاپوربھی شریک ہوئے،خصوصی اجلاس میں پاکستان اور آزادکشمیر کے ترانے بجائے گئے ،خصوسی اجلاس میں شہداور مقبوضہ کشمیر کی آزادی کیلئے دعاکی گئی۔

وزیراعظم آزادکشمیر راجہ فاروق حیدر نے خصوصی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ آج کادن تاریخی اہمیت کاحامل ہے،پاکستان کاہرشہری کشمیریوں سے یکجہتی کااظہار کررہاہے،پاکستان مشکلات کے باوجود کشمیر کے ساتھ کھڑا ہے،کشمیری خود کو اکیلا نہ سمجھیں،آزاد کشمیر قانون ساز اسمبلی میں مہاجرین بھی موجود ہیں،کشمیریوں کوپاکستانی حکومت اورعوام سے بہت امیدیں ہیں،تقسیم درتقسیم ہوگئی اب اس مسئلے سے باہر نکلیں۔

وزیراعظم آزادکشمیر نے کہاکہ ہمیں معلوم ہے پاکستان کو کیا مشکلات درپیش ہیں ، قائداعظم نے تقسیم برصغیرسے پہلے ہی کہہ دیاتھا کانگریس مسلمانوں کو دھوکا دے گی ،راجہ فاروق حیدر نے کہا کہ ہمیں جارحانہ پالیسی اپنانے کی ضرورت ہے،پاکستان میں قومی اتفاق رائے پیدا کریں اور قوم کو متحد کریں،انہوں نے کہاکہ امریکا کی ثالثی ہمارے فائدے میں نہیں ہوگی،امریکا کی ثالثی نے فلسطین کے ساتھ جو کیا اس کو سب نے دیکھا ہے ،ہمیں اپنی مسلم کانفرنس کے قیام پر فخر ہے،کبھی مجھ سے کوئی ناراض ہو جاتا ہے تو کبھی کوئی،میں کسی سے ناراض نہیں رہ سکتا۔وزیراعظم آزادکشمیر نے کہا کہ ہم آپ کے ساتھ ہیں اورپاکستان کاایجنڈا کبھی نہیں گرنے دیں گے ،پہلے ہم سینے پرگولی کھائیں گے پھرپاکستان کی طرف گولی بڑھے گی،انشااللہ پاکستان ترقی کرے گا اور مضبوط ہوگا۔

مزید : اہم خبریں /قومی /علاقائی /آزاد کشمیر /مظفرآباد