زیادتی کی کوشش یا انتقام؟ نوجوان لڑکی نے شادی سے ایک روزقبل ہی پاکستانی نوجوان کا نازک حصہ کاٹ ڈالا

زیادتی کی کوشش یا انتقام؟ نوجوان لڑکی نے شادی سے ایک روزقبل ہی پاکستانی ...
زیادتی کی کوشش یا انتقام؟ نوجوان لڑکی نے شادی سے ایک روزقبل ہی پاکستانی نوجوان کا نازک حصہ کاٹ ڈالا

  



فیصل آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) جڑانوالہ میں سابق محبوبہ نے شادی سے ایک روز قبل خنجر سے نوجوان کا عضو تناسل کاٹ ڈالا۔ ایکسپریس ٹربیون کے مطابق فیصل شہزاد نامی نوجوان بیرون ملک ملازمت کرتا تھا اور شادی کے لیے 26جنوری کو واپس پاکستان آیا تھا۔ جب اس کی شادی کی خبر اس کی سابق محبوبہ مدثر بی بی کو ملی تو اس نے فیصل سے درخواست کی کہ وہ اسے آخری بار ملنا چاہتی ہے۔ اس کے کہنے پر فیصل اس کے گھر چلا گیا جہاں مدثر بی بی نے اسے مردانگی سے ہی محروم کر ڈالا۔ اس کے اگلے روز فیصل کی بارات جانی تھی۔

رپورٹ کے مطابق فیصل کو فوری طور پر ہسپتال منتقل کیا گیا جہاں اس کی حالت تشویشناک بتائی جاتی ہے۔ مدثر بی بی کے والد اکبر امین نے واقعے کے فوری بعد تھانے جا کر فیصل کے خلاف ہی رپورٹ درج کروا دی۔ اس نے رپورٹ میں بتایا کہ اس کی بیٹی گھر میں اکیلی تھی کہ فیصل اندر گھس آیا اور خنجر کی نوک پر اس سے جنسی زیادتی کرنے کی کوشش کی۔ اس کی بیٹی نے کسی طرح فیصل خنجر چھین لیا اور اسی خنجر سے اپنا دفاع کرتے ہوئے اس کا عضو کاٹ ڈالا۔دوسری طرف فیصل کے بھائی عامر سہیل نے بھی ایک مقدمہ درج کروایا ہے جس میں مدثر بی بی، اس کے والد اور بھائی سمیت 5ملزمان کو نامزد کیا گیا ہے۔

مزید : علاقائی /پنجاب /فیصل آباد