کشمیر انڈیا کے لئے افغانستان ثابت ہوگا،حکومت آزادی کشمیر کے لئے نیشنل ایکشن پلان کا اعلان کرے:سینیٹر مشتاق احمد خان

کشمیر انڈیا کے لئے افغانستان ثابت ہوگا،حکومت آزادی کشمیر کے لئے نیشنل ...
کشمیر انڈیا کے لئے افغانستان ثابت ہوگا،حکومت آزادی کشمیر کے لئے نیشنل ایکشن پلان کا اعلان کرے:سینیٹر مشتاق احمد خان

  



پشاور(ڈیلی پاکستان آن لائن)امیر جماعت اسلامی خیبر پختونخوا سینیٹر مشتاق احمد خان نے کہا ہے کہ کشمیر انڈیا کے لئے افغانستان ثابت ہوگا،کشمیر میں کشمیریوں کی نسل کشی کی جارہی ہے،مودی کشمیر کا قصائی ہے، وزیر اعظم پاکستان تقریروں اور ٹویٹس سے آگے نہیں بڑھ رہے، کشمیر تقریروں اور ٹویٹس سے آزاد نہیں ہوگا،حکومت تمام سٹیک ہولڈرز کو اعتماد میں لے کر آزادی کشمیر کے لئے نیشنل ایکشن پلان کا اعلان کرے اور کشمیر کی آزادی روڈ میپ دے،کشمیر جہاد فی سبیل اللہ سے آزاد ہوگا۔

قصہ خوانی بازار پشاور  میں آزادی کشمیر ریلی سے خطاب کرتے ہوئے سینیٹر مشتاق احمد خان نے کہا کہ وزیر اعظم اس ٹرمپ سے کشمیر کی ثالثی کی امید کررہے ہیں جس نے چند دن قبل مسلمانوں کا قبلہ اول اسرائیل کو دے دیا،ٹرمپ سے ثالثی کی امید سراب کے پیچھے بھاگنا ہے،کشمیر پر ٹرمپ کی ثالثی قبول نہیں،کشمیریوں کو حق خو ارادیت دیا جائےاوراقوام متحدہ کی قراردادوں کےمطابق اس مسئلےکوحل کیاجائے،کیا حکمران آخری کشمیری کے مرنے کا انتظار کررہے ہیں؟کشمیر کی مائیں، بہنیں، بیٹیاں پاک فوج کی راہ تک رہی ہیں،آزادی کشمیر کےلئےآخری سپاہی،آخری گولی،خون کے آخری قطرے اور ہزار سال تک لڑیں گے۔سینیٹر مشتاق احمد خان نے کہا کہ ہندوستان پر ایک دہشت گرد مودی کی حکومت ہے،مودی اوراس کی بی جے پی نےبابری مسجد کو شہید کیا اورگجرات میں ہزاروں مسلمانوں کو قتل کیا،کشمیری عوام سے اظہار یکجہتی کے لیے سڑکوں پر نکلے ہیں،ان شاء اللہ کشمیر کی آزادی کی جدوجہد ہندوستان کو نگل لے گی۔

مزید : علاقائی /خیبرپختون خواہ /پشاور