لاک ڈائون میں نرمی کے اعلان کے بعد آسٹرین حکومت نے حفاظتی اقدامات کی خلاف ورزی پر  جرمانے کا اعلان کردیا

لاک ڈائون میں نرمی کے اعلان کے بعد آسٹرین حکومت نے حفاظتی اقدامات کی خلاف ...
 لاک ڈائون میں نرمی کے اعلان کے بعد آسٹرین حکومت نے حفاظتی اقدامات کی خلاف ورزی پر  جرمانے کا اعلان کردیا
سورس:   insta/sebastiankurz

  

ویانا (المیر باجوہ)  تیسرے لاک ڈائون میں نرمی کے اعلان کے بعد حکومت نے حفاظتی اقدامات کی خلاف ورزی پر  جرمانے کا اعلان کردیا اور  وزیراعظم سبسٹین کرز  کا کہنا ہے کہ ہمارے معاشرے میں کورونا سے لاپرواہی کی کوئی جگہ نہیں ، 8فروری سے نرمی کے بعد  سخت اقدامات کے ساتھ ہی کامیاب ہوسکتے ہیں۔ 

 پیر سے آسٹریا میں تیسرا سخت لاک ڈاؤن نرم ہوگا جس دوران  جسمانی مراکز  خوردہ فروش ، سکول اور سروس فراہم کرنے والے سخت حفاظتی احتیاطی تدابیر کے تحت دوبارہ کام شروع کرسکتے ہیں۔

وزیراعظم کرز نے  انسٹاگرام پر "اقدامات کی خلاف ورزی کرنے پر سخت سزاؤں" کے بارے میں بات کی اور لکھا کہ اب 8 فروری سے کورونا حفاظتی اقدامات کی خلاف ورزی کرنے والوں کو اب  90 یورو واجب الادا کرنے ہوں گے۔ ماسک کی ضرورت (FFP2) کی تعمیل کرنے میں ناکامی اور کم سے کم فاصلہ دو میٹر  کی تعمیل نہ کرنے میں سخت جرمانے کیے جائیں گے۔

 سبسٹین کرز نے واضح الفاظ میں کہا کہ کورونا اقدامات کی زیادہ سے زیادہ خلاف ورزیاں ہوتی ہیں۔ اس سے نہ صرف خود بلکہ دوسرے افراد بھی خطرے میں پڑ جاتے ہیں۔ جرمانے میں اضافہ کرکے  ہم یہ ظاہر کرنا چاہتے ہیں کہ ہمارے معاشرے کو دوسروں کو خطرے میں ڈالنے میں کوئی جگہ نہیں ۔

مزید :

بین الاقوامی -