برطانیہ آنے والے مسافروں کیلئے نئی پریشانی 

برطانیہ آنے والے مسافروں کیلئے نئی پریشانی 
برطانیہ آنے والے مسافروں کیلئے نئی پریشانی 

  

لندن (مجتبی علی شاہ ) برطانوی دفترخارجہ کے وزیر جیمس چالاکی نے   دوسرے ممالک سے آنے والے مسافروں کو  10 دن میں ہوٹل میں قیام کرنے کے حکومتی فیصلے کی حمایت کردی اور اس فیصلے پر عمل درآمد  15 فروری سے شروع ہوگا۔

مسٹر چالاکی نے کہا کہ وہ نہیں جانتے کہ ابھی تک کتنے ہوٹلوں نے سائن اپ کیا ہے جو ان مسافروں کو ٹھہرائیں گے ۔لیبر پارٹی نے کہا کہ اس سکیم کو صرف کچھ ممالک ہی نہیں ، تمام بین الاقوامی مسافروں تک بڑھایا جانا چاہئے تاکہ وائرس کے پھیلاؤ کا خطرہ کم سے کم ہو سکے ۔ کورونا وائرس کی نئی شکلوں کے پھیلاؤ کو کنٹرول کرنے کی کوشش میں یہ نیا قانون متعارف کرایا جارہا ہے ،  سائنس دانوں کا خیال ہے کرونا وائرس اپنی شکل بدل رہا ہے اور یہ  بڑھتا جائے گا ،اگر اسے کنٹرول نہ کیا جا سکا تو یہ ویکسین کی تاثیر کو بھی کم کر سکتا ہے ۔

برطانیہ کے رہائشیوں اور آئرش شہریوں کو اس قانون کی پاسداری کرنا ہوگی  "ریڈ لسٹ" میں 33 ممالک سے سفر کرنے والے افراد کو اس قانون کا سامنا کرنا پڑے گا ، ان ممالک میں جنوبی امریکہ ، جنوبی افریقہ ، متحدہ عرب امارات اور پرتگال بھی شامل ہے ۔ ان ممالک سےمسافروں  کے داخلے پر ہی فی الحال پابندی عائد ہے ۔ 

مزید :

برطانیہ -