' 53 آئی پی پیز کے ساتھ نیا معاہدہ ہونے جارہا ہے' عبدالحفیظ شیخ نے خوشخبری سنا دی

' 53 آئی پی پیز کے ساتھ نیا معاہدہ ہونے جارہا ہے' عبدالحفیظ شیخ نے خوشخبری سنا ...
' 53 آئی پی پیز کے ساتھ نیا معاہدہ ہونے جارہا ہے' عبدالحفیظ شیخ نے خوشخبری سنا دی
سورس:   File

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) وفاقی وزیر خزانہ عبدالحفیظ شیخ نے کہا ہے کہ 53 ان ڈیپینڈنٹ پاور پروڈیوسر (آئی پی پیز) کےساتھ نیا معاہدہ ہونے جارہا ہے جس کی کابینہ سے 10 روز میں اجازت مل جائے گی، نئےمعاہدے سے 800 ارب روپے کا فائدہ ہو گا۔ 

وفاقی وزیر خزانہ نےنجی ٹی وی دنیا نیوز کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ ماضی میں توانائی معاہدے ڈالر میں کیےگئے، آئی پی پیز کو 450 ارب روپےسابق بلوں کی مد میں دے رہے ہیں۔ ان کا کہنا تھا کہ آئی پی پیز کو 450ارب روپے 2قسطوں میں دیئے جائیں گے، 40فیصد رقم فوری طور پر دی جائےگی جبکہ باقی 60فیصد رقم اگست میں دی جائےگی۔ پرانی ٹیکنالوجی کےآئی پی پیز پلانٹ بند کر کے ڈسڑی بیوشن کےکلیکشن کا کام نجی شعبے کو دیا جارہا ہے۔ 

وفاقی وزیر خزانہ نے کہا کہ حکومت پر الزام لگتا ہے کہ اس نے قرض زیادہ لیا، حکومت سنبھالی تومجموعی قرض 25ہزارارب روپے تھا، ہماری حکومت نے 12ہزار ارب روپے کا قرض لیاجبکہ 12 ہزارسےچھ ہزار ارب روپے ماضی کے سود میں اداکیے۔ کوروناکےدوران 700ارب روپے کا عوام کو پیکج دیا گیا۔  انہوں نے کہا کہ قرض میں تین ہزار ارب روپےکااضافہ ڈالر مہنگا ہونےکے باعث ہوا، ایک ہزار ارب روپے حکومت نے اپنے پاس رکھے۔ 

عبدالحفیظ شیخ کا مزید کہنا تھا کہ بجلی کے شعبے پربہت زیادہ توجہ ہے  جس کے لیے اقدامات کیے جارہے ہیں۔ توانائی  شعبے پر کیے گئے اقدامات کے اثرات نو سے 12 ماہ میں آئیں گے۔ 

مزید :

قومی -