مسئلہ کشمیر پر پاکستان کے اصولی موقف میں کوئی تبدیلی نہیں آئی:ترجمان دفتر خارجہ

مسئلہ کشمیر پر پاکستان کے اصولی موقف میں کوئی تبدیلی نہیں آئی:ترجمان دفتر ...
مسئلہ کشمیر پر پاکستان کے اصولی موقف میں کوئی تبدیلی نہیں آئی:ترجمان دفتر خارجہ

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)ترجمان دفتر خارجہ نے کہا ہے کہ جموں و کشمیر تنازع پرپاکستان کے اصولی موقف میں کوئی تبدیلی نہیں آئی، وزیراعظم نے کوٹلی میں خطاب کے دوران کشمیر پر پاکستان کے دیرینہ موقف کا اعادہ کیا، جموں و کشمیرکاتنازع اقوام متحدہ سلامتی کونسل کی قراردادوں میں موجود ہے۔

دفتر خارجہ کی جانب سے جاری وضاحتی بیان میں ترجمان کا کہنا تھا کہ وزیر اعظم عمران خان نے کشمیریوں کے حق خودارادیت کے لیے  پاکستان کے دیرینہ موقف اور حمایت کا اعادہ کیا ہے،وزیر اعظم نے بار بار جموں و کشمیر سے متعلق سلامتی کونسل کی قراردادوں کے بارے میں بات کی ہے، وزیر اعظم نے اقوام متحدہ کی قراردادوں پر عمل درآمد کی ضرورت پر زور دیا۔

دفتر خارجہ کے مطابق  پاکستان اقوام متحدہ کے زیراہتمام آزادانہ اور غیرجانبدارانہ رائے شماری کے ذریعے جموں و کشمیر تنازع کے حل کے لیے پرعزم ہے، رائے شماری کا وعدہ اقوام متحدہ کی متعلقہ قراردادوں میں شامل ہے۔

واضح رہے کہ اس سے قبل مسلم لیگ کے رہنما شاہد خاقان عباسی نے کوٹلی میں وزیراعظم عمران خان کے بیان پر ردعمل دیتے ہوئے  کہا تھا کشمیریوں کے ساتھ آج پاکستان کے لیے بھی افسوسناک دن ہے،کشمیر پر جو موقف ہم 1948 سے لے کر چل رہے تھے آج وزیراعظم نے اس کی نفی کردی، کسی وزیراعظم کو یہ اختیار حاصل نہیں کہ اسے تبدیل کرسکے، یہ ایسی غلطی ہے جس پر تاریخ معاف نہیں کرے گی۔

یہ بھی یاد رہے کہ وزیراعظم عمران خان نے کوٹلی میں خطاب کرتے ہوئےکہا تھا کہ مقبوضہ کشمیر اور آزاد کشمیر کے عوام جب پاکستان کے حق میں فیصلہ کریں گے تو پاکستان انہیں حق دے گا کہ وہ آزاد رہنا چاہتے ہیں یا پاکستان کا حصہ بننا چاہتے ہیں۔

مزید :

قومی -