مشرف دشمن کی آنکھوں میں آنکھیں ڈال کر بات کرتے تھے، پرویز الہٰی کا وفات پر اظہار افسوس

مشرف دشمن کی آنکھوں میں آنکھیں ڈال کر بات کرتے تھے، پرویز الہٰی کا وفات پر ...
مشرف دشمن کی آنکھوں میں آنکھیں ڈال کر بات کرتے تھے، پرویز الہٰی کا وفات پر اظہار افسوس

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) سابق وزیراعلیٰ پنجاب چوہدری پرویز الہٰی نے سابق صدر جنرل (ر) پرویز مشرف کے انتقال پر افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ مشرف دشمن کی آنکھوں میں آنکھیں ڈال کر بات کرتے تھے۔

نجی ٹی وی" دنیا نیوز" کے مطابق (ق) لیگ کے  رہنما پرویز الہٰی کا کہنا تھا کہ پرویز مشرف کی وفات پر ان کے اہل خانہ کے غم میں برابر کے شریک ہیں، پاک فوج اور ملک کیلئے ان کی خدمات کو فراموش نہیں کیا جا سکتا۔سی پیک پرویز مشرف کا منصوبہ تھا، انہوں نے پاکستان میں فلاحی ریاست کی بنیاد رکھی، ان کے دور میں ملکی برآمدات بلند سطح پر تھیں، آج پاکستان میں جو ترقی ہوئی وہ مشرف کی دی ہوئی ہے، ان کی وفات پر خراج عقیدت پیش کرنا چاہئے۔

واضح رہے کہ پرویز مشرف کا آج علی الصبح دبئی کے ہسپتال میں  انتقال ہوا تھا، سابق صدر کے اہل خانہ نے وفات کی تصدیق کر دی ہے۔

سابق صدر پرویز مشرف11اگست 1943 کو نئی دہلی میں پیدا ہوئے تھے،پرویزمشرف کا خاندان 1947 میں نئی دہلی سے کراچی منتقل ہوا تھا،پرویز مشرف نے کراچی کے سینٹ پیٹرک ہائی سکول سے تعلیم حاصل کی ، بعد میں ایف سی کالج لاہور سے تعلیم حاصل کی ۔پرویز مشرف 1964 میں پاکستانی فوج میں شامل ہوئے ، 1961 میں پاک فوج میں کمیشن حاصل کیا،بعد میں سپیشل سروسز گروپ میں شمولیت اختیار کی ، 1965 اور1971 کی جنگوں میں بھی حصہ لیا،پرویز مشرف 7 اکتوبر1998 کو چیف آف آرمی کے عہدے پر فائز ہوئے ،پرویز مشرف نے 12 اکتوبر1999 میں ملک میں ایمرجنسی لگا کر چیف ایگزیکٹو کا عہدہ سنبھال لیا تھا،پرویز مشرف2001 سے 2008 تک صدر پاکستان کے عہدے پر براجمان رہے ۔

مزید :

قومی -