وکلا تحریک کی وجہ سے ہی ملک میں جمہوریت آئی:افتخار محمد چوہدری

وکلا تحریک کی وجہ سے ہی ملک میں جمہوریت آئی:افتخار محمد چوہدری
 وکلا تحریک کی وجہ سے ہی ملک میں جمہوریت آئی:افتخار محمد چوہدری

  

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک)چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس افتخار محمد چوہدری نے کہا ہے کہ آئین کسی ایسی سیاسی جماعت بنانے کی اجازت نہیں دیتا جس سے ملک میں انتشار پھیلے یا ملکی سلامتی کو خطرہ ہو۔ آئین کے تحت ہر شہری پر فرض ہے کہ وہ ملک کا وفادار رہے۔لاہور میں وکلاسے خطاب کر تے ہوئے ان کا کہنا تھاکہ ہر وہ شخص جو پاکستان میں مستقل رہتا ہو یا کچھ وقت کے لیے آئے اس پر ملکی آئین کی پابندی لازم ہے۔ ملک میں پہلی بار جمہوری حکومت اپنی مدت پوری کر رہی ہے اور کسی کو شب خون مارنے کی جرات نہیں ہوئی اس کی وجہ وکلا تحریک اور آزاد عدلیہ ہے۔انہوں نے کہا کہ وکلا تحریک کی وجہ سے ہی ملک میں جمہوریت آئی۔آئین کے تحت صرف اسی کو تحفظ حاصل ہوتا ہے جو ملک کا وفادار ہو۔منتخب نمائندوں پر لازم ہے کہ وہ آئین کی پابندی کو یقینی بنائیں۔ انہوں نے کہا کہ عوام کو آزاد عدلیہ سے بہت سی توقعات وابستہ ہیں اور وہ چاہتے ہیں کہ فوری اور سستا انصاف مہیا ہو۔ اس موقع پر چیف جسٹس لاہور ہائی کورٹ عمر عطا بندیال سمیت ججوں اور وکلا کی کثیر تعداد بھی موجود تھی۔

مزید :

لاہور -