دعا ہے کہ6 201ء خوشحالی اورا من کا سال ہو!

دعا ہے کہ6 201ء خوشحالی اورا من کا سال ہو!

فلم ،ٹی وی اور تھیٹر کے فنکاروں نے نئے سال کیلئے نیک خواہشات کا اظہار کرتے ہوئے اس امید کا اظہار کیا ہے کہ سال 2016ء پاکستان میں خوشحالی ، امن اور فلم انڈسٹری کی بحالی کا سال ثابت ہو گا ، نئے سال میں قوم کے ہر فرد کو انفرادی اور اجتماعی طور پر اس عزم کا اظہار کرنا ہوگا کہ ہم نے اپنے ملک میں تبدیلی لانی ہے اور یہاں پائی جانے والی کرپشن ، نا انصافی سمیت دیگر برائیوں کو جڑ سے اکھاڑ پھینکے میں اپنا ہر ممکن کردار ادا کرنا ہے ۔

ڈائریکٹرسید نور نے کہا کہ نیا سال پاکستانی سینما اور فلم کا سال ہوگا کیونکہ اس شعبے میں بہت سے نئے لوگ کام کررہے ہیں۔مجھے یقین ہے کہ ہماری فلمیں بھارتی فلموں کے مقابلے میں زیادہ پسند کی جائیں گی کیونکہ اب ہماری فلمیں اس قابل ہیں۔میلوڈی کوئین آف ایشیاء پرائڈ آف پرفارمنس شاہدہ منی نے کہا تاکہ ہمارا ملک جو مختلف بحرانوں میں گھرا ہوا ہے مزید ترقی کرے۔ مجھے یقین ہے کہ یہ سال میوزک انڈسٹری کے لئے خوشیاں لائے گا۔ڈائریکٹر شاہد ظہورنے کہا کہ نیا سال فلم اور سینما کے لئے ضرور بہتر ہوگا کیونکہ بہت سے نئے لوگ اس سلسلے میں کام کررہے ہیں۔۔ گلوکارظفر اقبال نیویارکر نے کہا کہ میری دعا ہے کہ ہمارا ملک امن کو گہوارہ بنے اور ہر طرف خوشیاں ہی خوشیاں ہوں۔ اداکارہ و پرفارمر میگھانے کہا کہ یہ سال ٹی وی اور سٹیج کیلئے مزید اچھا ہوگا اور جس طرح ہمارا ڈرامہ بھارت میں کامیاب ہوا ہے اسی طرح دیگر ممالک میں بھی پسند کیا جائے گا۔اداکارہ خوشبو کا کہنا ہے کہ سال2015بہت سی تلخ و شریں یادوں کے ساتھ رخصت ہو رہا ہے ۔اداکارہ،ماڈل اور پرفارمر ماہ نورکا کہنا ہے کہ ہمیں دعا کرنے چاہیے کہ آنے والا سال ہمارے ملک کیلئے امن و سلامتی کا سال ہو اور ہمارے ملک سے ہمیشہ کیلئے دہشگردی کا خاتمہ ہو جائے۔

امان اللہ اورپروڈیوسر ارشد چوہدری نے کہا کہ پاکستان اسلام کے نام پر قائم ہوا ہے اور دہشتگرد کسی بھی صورت میں ہمارے وطن کا کچھ نہیں بگارڈ سکتے پر ضرورت اس امر کی ہے کہ دہشگردی کے خلاف ہمارے سیاست دان اور قوم ایک ہوجائیں۔اداکارہ صائمہ نے کہا ہمیں نئے سال کی آمد پر ہلہ گلہ کرنے کی بجائے ملک کی سلامتی اور امن کی دعا کرنی چاہیئے۔اداکارہ رز کمالی،سدرہ نور اور شیبا رانی نے کہا کہ ہم اچھی امیدوں کے ساتھ اگلے سال میں داخل ہورہے ہیں لیکن ہمیں اچھی توقعات وابستہ کرنی چاہیءں۔ اداکار ظفر عباس نے کہا کہ 2016 انشا ء اللہ ہم سب کے لئے امید ،خوشی اورا من کا سال ہوگا۔ نور اور ثناء نے کہا کہ گزشتہ سال ہم دونوں نے شوبزمیں کامیابیاں سمیٹ کر شوبز میں میدان مارا اس سال بھی ہم اپنی کامیابیوں کا سفر جاری رکھیں گی۔نور نے کہا کہ میں نے بطور ہدایتکارہ اپنی فلم ’’ عشق پازیٹو ‘‘ شروع کی تھی اور اس کو مکمل کر لیا ۔ اس کے علاوہ ایک اور فلم ’’ خدائے ذوالجلال ‘‘ کی جس کی نمائش رواں سال میں ہو گی ۔ثناء نے کہا کہ مجھے نجی ٹی وی چینل سے بطور میزبان مارننگ شو کرنے کی بھی پیشکش ہوئی ۔ ۔ ثناء نے کہا کہ میں نے گزشتہ سال فلم ’’ عشق پازیٹو ‘‘ اور ہدایتکار فاروق مینگل کی فلم ’’ ہجرت ‘‘ میں آئٹم سونگ پکچرائز کروائے جبکہ ڈائریکٹر خالد حسن کی ترکی میں بننے والی فلم ’’ زہر عشق ‘‘ کی شوٹنگ میں بھی میں بھی حصہ لیا ۔اس فلم کی شوٹنگ رواں سال بھی جاری رہے گی۔میں اس سال بھی کئی ٹی وی ڈراموں میں کام کروں گی۔ناصر ادیب کے شاگرد ہدایتکار عمران ادیب نے کہا ہے کہ وہ 2016ء میں اردو فلم ’’ عشق والا لو‘‘ بنائیں گے ۔ ان دنوں فلم کا پیپر ورک مکمل کیا جارہا ہے جس کے بعد شوٹنگ کاآغاز ہوگا ۔ ناصر ادیب میری فلم کا اسکرپٹ تحریر کر رہے ہیں میں پیپر ورک مکمل کرنے کے ساتھ فلم کی لوکیشنز کو بھی حتمی شکل دے رہے ہیں۔ عمران ادیب نے کہا کہ ’’ عشق والا لو ‘‘ موضوع کے اعتبار سے نئے سال کی منفرد فلم ثابت ہو گی جس میں معاشرے کے مسائل کو نئے انداز میں پیش کیا جائے گا ۔ ہمایوں سعید نے کہا کہ پاکستانی فلموں نے 98کروڑ سے زائد کا بزنس کر کے ایک نیا ریکارڈ قائم کر دیا ۔ گزشتہ برس ریلیز ہونے والی فلموں کی اکثریت باکس آفس میں شاندار کامیابی حاصل کرنے میں ناکام ثابت ہوئی تاہم میری فلم ’’ جوانی پھر نہیں آنی ‘‘اور یاسر نواز کی فلم ’’ رانگ نمبر ‘‘ نے شاندار بزنس کیا ۔ خاص طور پر ’’ جوانی پھر نہیں آنی ‘‘ نے 35کروڑ سے زائد کی کمائی کی جبکہ اس کے ساتھ دیگر فلموں میں ’’ رضیہ پھنس گئی غنڈوں میں‘‘ ،’’ بن روئے ‘‘ ’’ مور ‘‘، سوا رنگی ، ’’کراچی سے لاہور ‘‘ ، ’’جلیبی ‘‘’’ دیکھ مگر پیار سے اور منٹو سمیت دیگر فلمیں شامل ہیں مگر ان فلموں کو بھرپور کامیابی حاصل نہ ہو سکی توقع ہے کہ نئے سال میں تین درجن سے زائد فلمیں ریلیز ہوں گی جس سے فلم انڈسٹری کی بحرانی کیفیت ختم ہونے میں مدد ملے گی ۔

سٹار میکر جرار رضوی،پروڈیوسر ،یار محمد صابری،حاجی عبد الرزاق ،مدثر حسن قاسمی ،ڈائریکٹر ڈاکٹر اجمل ملک،گڈو کمال،بندیا حسین،سیمی خان ،عرش چوہدری،اچھی خان ،ارباز خان ،رزمہ نوال،ظفری خان،صوبیہ خان ،سونیا سیٹھی ،رباب ہاشم،صوفیہ احمد،نسیم وکی،مٹھو جی،عمران احمد،سلیم بزمی،کوریو گرافر سجاد سمراٹ ،ڈانسر بوائے عباس،محمود،گلوکار نیاز خان ،رائمہ خان،ہنی شہزادی ،شاہد خان جہانزیب،گلفام اور مدیحہ اشرف ،جاوید شیخ، ہمایوں سعید ، قوی خان ، مسعود اختر ، ریشم ، ثناء جاوید ، ماریہ واسطی، سعدیہ امام، لیلیٰ، گلوکارہ افشاں زیبی ، سائرہ نسیم ،رابی پیرزادہ ، خوشبو ، حمیرا ارشد ،شبنم مجید ، شاہدہ منی ، افتخار ٹھاکر ، سخاوت ناز ، امان اللہ گوشی خان نے بھی ملے جلے خیالات اور جذبات کا اظہار کیا۔

ان سب نے نئے سال کو خوش آمدید کہتے ہوئے کہا کہ پاکستان اب بہتری کی جانب گامزن ہے لیکن اس کی رفتار سست ہے جسے بڑھانے کے لئے سب کو اپنا کردار ادا کرنا ہوگا۔ فنکاروں نے کہا کہ گزشتہ سال پاکستان فلم انڈسٹری کو زوال سے نکالنے کا سال ثابت ہوا ہمیں نئے سال میں اس عزم کا اعادہ کرنا چاہیے کہ ہم اپنی انڈسٹری کو دوبارہ عروج پر لے کر جائیں گے اور اس کے لئے سب لوگ مل کر جدوجہد کریں گے ۔فنکاروں نے مزید کہا کہ پاک فوج جس طرح دہشتگردوں کے خلاف کارروائیاں جاری رکھے ہوئے انشا اللہ قوی امید ہے کہ 2016ء پاکستان کے لئے امن کا سال ثابت ہوگا اور پاکستان امن کا گہوارہہ بنے گا۔فلم سے وابستہ فنکاروں نے حکومت سے مطالبہ کیا کہ نئے سال میں فلم انڈسٹری کی سرپرستی کا اعلان کیا جائے تاکہ ا س سے وابستہ دیگر شعبوں کے ہنر مندوں کے گھروں کے چولہے بھی جل سکیں۔

***

مزید : ایڈیشن 1