3 ایکوا کلچر افسران کو بیرون ملک تربیت دی جائے گی

3 ایکوا کلچر افسران کو بیرون ملک تربیت دی جائے گی

لاہور( جنرل رپورٹر) ڈائریکٹر جنرل ماہی پروری پنجاب ڈاکٹر محمد ایوب نے کہا ہے کہ ’’ پروموشن آف گڈ ایکوا کلچر پریکٹسز ان پنجاب ‘‘ منصوبے کے تحت 3 ایکوا کلچر افسران کو بیرون ملک تربیت دی جائے گی جبکہ بین الاقوامی ماہرین پنجاب اور بلوچستان آ کر 30 ایکوا کلچر افسران اور 50 فش فارمرز کو تربیت فراہم کریں گے ۔ انہوں نے کہا کہ گڈ ایکوا کلچر پریکٹسز کا صوبہ پنجاب اور بلوچستان کے 50 فش فارمز پر اطلاق کیا جائے گا ۔

انہوں نے کہا کہ فوڈ اینڈ ایگریکلچر آرگنائزیشن کا یہ منصوبہ فشریز سیکٹر میں ایک سنگ میل ثابت ہو گا اور اس سے اس صنعت کو نمایاں فروغ ملے گا ۔انہوں نے یہ بات پی سی ہوٹل لاہور میں فوڈ اینڈ ایگریکلچر آرگنائزیشن پاکستان کے ماہی پروری کے شعبہ میں تکنیکی تعاون کی فراہمی کے منصوبے کے حوالے سے منعقدہ ورکشاپ سے خطاب کرتے ہوئے کہی ۔ اس موقع پر پاکستان میں ایف اے او اقوام متحدہ کے نمائندے مسٹر پیٹرک ٹی ایونز (Mr. Patrick T.Evans) ، ایکوا کلچر آفیسر ایف اے او ، ریجنل آفس فار ایشاء بنکاک سے مسٹر میاؤ وی من (Mr. Miao Weimin) ، روم سے آئے ہوئے ایف اے او کے ایکوا کلچر اینڈ فشریز ڈیپارٹمنٹ کے ایکوا کلچر آفیسر محمد رضا الحسن کے علاوہ ڈائریکٹر جنرل فشریز بلوچستان محمد نور اور ڈائریکٹر فشریز گلگت بلتستان غلام محی الدین کے علاوہ صوبہ بھر سے آئے ہوئے فش فارمرز ، فیڈ پروسیسرز اور دیگر سٹیک ہولڈرز بھی موجود تھے ۔ڈاکٹر محمد ایوب نے ورکشاپ سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اس منصوبے سے فش فارمرز سے لے کر اینڈ یوزرز تک مستفید ہوں گے۔ انہوں نے کہا کہ تکنیکی تعاون کی فراہمی کا یہ منصوبہ ملکی تاریخ کا پہلا منصوبہ ہے ۔انہوں نے کہا کہ اس منصوبے کا اطلاق محکمہ ماہی پروری پنجاب ، محکمہ ماہی پروری بلوچستان پاکستان ایگریکلچر ریسرچ کونسل (PARC) اور فشریز ڈویلپمنٹ بورڈ کے باہمی تعاون سے کیا جائے گا ۔ صوبہ پنجاب اور بلوچستان کے منتخب کردہ علاقوں پر کیا جائے گا ۔ایف اے او اقوام متحدہ کے نمائندے مسٹر پیٹرک ٹی ایونز نے ورکشاپ سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ایکوا کلچر کی ترقی ہی ماہی پروری کا مستقبل ہے اور ایشیاء ایکوا کلچر کے شعبہ میں تیزی سے ترقی کر رہا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ ماہی پروری کی صنعت کی ترقی کے لئے ان کا ادارہ ہر ممکن تعاون کرے گا اور یہ منصوبہ تاریخی ثابت ہو گا اور اس منصوبے پر عملدرآمد سے فش فارمرز کو سرٹیفیکیشن کی طرف لے جانے اور بین الاقوامی معیار کے مطابق پیدا وار کے حصول میں مدد ملے گی ۔مزید براں ورکشاپ سے ایڈیشنل سیکرٹری ٹیکنیکل رشید اعوان ،ایکوا کلچر آفیسر ایف اے او مسٹر میاؤ وی منز ، ایکوا کچلر افسر محمد رضا الحسن اور دیگر نے بھی خطاب کیا اور منصوبے سے پہنچنے والے فوائد پر روشنی ڈالی ۔

مزید : کامرس