پنجاب میں جرائم گڈگورننس کے دعوؤں کے منہ پر طمانچہ ، چودھری سرور

پنجاب میں جرائم گڈگورننس کے دعوؤں کے منہ پر طمانچہ ، چودھری سرور

لاہور(نمائندہ خصوصی) تحر یک انصاف پنجاب کے آرگنائزر چو دھر ی محمدسرور نے پنجاب میں امن وامان کی بدتر ین صورتحال پر ’’حقائق نامہ ‘‘جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ ایک سال کے دوران پنجاب میں 5ہزار8سو20سے زائد افراد قتل ہوئے جن میں سے341صرف لاہور سے ہیں ‘ اغوا کے 14 ہزار 4 سو37‘اغوا برائے تاوان کے95‘بداخلاقی کے 2867اور گینگ ریپ کے 235واقعات حکمرانوں کی گڈگورننس کے دعوؤں کے منہ پر طمانچہ ہیں ‘ مویشی چوری کے 7 ہزار ‘ گاڑیاں و موٹر سائیکلیں چوری کے 20 ہزار 9 سو 60 واقعات نے حکمرانوں کی نااہلی پر تصد یق کی مہر لگا دی ہے‘پنجاب میں40ہزار سے اشتہاری بھی آزاد گھوم رہے ہیں ‘صوبے میں ایک سال 440سے زائد پولیس مقابلے ہوئے جن میں درجنوں بے گناہوں کو پو لیس نے قتل کر دیا ہے اور جعلی پو لیس مقابلے پر آج تک کسی کو سزانہیں ملی ‘لاہور جیسے شہر میں بھی ’’بھتہ خوری ‘‘کے واقعات معمول بن چکے ہیں ‘‘جعلی پو لیس مقابلے بھی پو لیس کی پہچان بن چکے ہیں ‘پنجاب میں پو لیس جرائم پیشہ لوگوں کو پکڑ نے کی بجائے (ن) لیگ کے ’’پو لیس ونگ ‘‘کا کردار اداکر رہی ہے ۔ حقائق نامہ میں صوبائی درالحکومت میں ایک سال کے دوران ہونیوالے جرائم کی نشاندہی کرتے ہوئے بتایا گیا ہے کہ 341افراد صرف لاہور میں قتل ہوئے ہیں چوروں نے ایک ہزار 19قیمتی گاڑیاں جبکہ 4ہزار 419موٹر سائیکلیں چوری کر لیں دیگر 426 وارداتوں میں کروڑوں روپے لوٹ لئے گئے۔ ڈکیتی کے601‘چوری کے1191‘گھروں میں ڈکیتی کے205‘گاڑی چوری کے507کے اشتہاریوں کو پو لیس گر فتار کر نے میں مکمل ناکام ہو چکی ہے جسکی وجہ سے اشتہاری دن رات قوم کو لوٹنے اور لوگوں کو قتل کر نے میں مصروف ہیں۔

مزید : صفحہ آخر