سندھ ہائیکورٹ نے وی آئی پی پروٹوکول سے متصادم قوانین کی تفصیلات طلب کر لیں

سندھ ہائیکورٹ نے وی آئی پی پروٹوکول سے متصادم قوانین کی تفصیلات طلب کر لیں

کراچی(اے این این) سندھ ہائی کورٹ نے وی آئی پی پروٹوکول کیخلاف درخواست کی سماعت کے دوران درخواست گزار سے وی آئی پی پروٹوکول سے متصادم قوانین کی تفصیلات طلب کرلی۔چیف جسٹس سندھ ہائی کورٹ جسٹس سجاد علی شاہ کی سربراہی میں بنچ نے وی آئی پی پروٹوکول کیخلاف انصاربرنی ٹرسٹ کی درخواست کی سماعت کی۔ سماعت کے دوران عدالت نے درخواست گزار کے وکیل سے استفسار کیا کہ کیا درخواست گزارٹرسٹی ہے، جس پر وکیل نے بتایا کہ درخواست گزار ٹرسٹ کا منیجر ہے اور یہ مفادعامہ کی پٹیشن ہے۔ عدالت عالیہ نے ریمارکس دیئے کہ قانون کیمطابق ٹرسٹ کے لئے یا تو ٹرسٹی پیش ہوسکتا ہے یا وکالت نامے کے ہمراہ وکیل، اس لئے اگر وکیل پیش ہونا چاہتے ہیں تو وکالت نامہ جمع کرایا جائے، جس پر وکیل نے اپنا وکالت نامہ جمع کرایا۔سماعت کے دوران چیف جسٹس سجاد علی شاہ نے درخواست گزار کے وکیل سے استفسار کیا کہ وی آئی پی پروٹوکول کس قانون سے متصادم ہے، وکیل کی جانب سے تسلی بخش جواب نہ ملنے پر عدالت نے ریمارکس دیئے کہ عدالت کو مطمئن کیا جائے کہ کس قانون کے تحت حکومت کو پروٹوکول کے لیے سڑکیں بند کرنے سے روکا جاسکتا ہے، ایک ہفتے میں ان قوانین کاحوالہ دیں جو وی آئی پی پروٹوکول کی اجازت نہیں دیتے۔

مزید : صفحہ آخر