دہشتگردوں اور سہولت کاروں میں گٹھ جوڑ ختم کرنے کیلئے آخری حد تک جائیں گے :شہباز شریف

دہشتگردوں اور سہولت کاروں میں گٹھ جوڑ ختم کرنے کیلئے آخری حد تک جائیں گے ...

لاہور(سٹی رپورٹر) وزیراعلیٰ پنجاب میاں محمد شہباز شریف نے کہا ہے کہ دہشت گردوں اور ان کے سہولت کاروں کے گٹھ جوڑکے مکمل خاتمے کیلئے آخری حد تک جائیں گے کیونکہ قائداعظمؒ کے پاکستان میں دہشت گردی اورمذہبی منافرت کی کوئی گنجائش نہیں،پرامن معاشرہ کے قیام کا وعدہ ہر قیمت پر پورا کریں گے۔وزیراعلیٰ شہبازشریف نے اعلی سطحی جلاس میں صوبے میں امن عامہ کی مجموعی صورتحال اورنیشنل ایکشن پلان پر عملدر آمد سے متعلق کیے جانے والے اقدامات پر پیش رفت کا جائزہ لیاگیا۔اجلاس نے نیشنل ایکشن پلان کے تحت انسداد دہشت گردی کیلئے اٹھائے جانے والے اقدامات پر اطمینان کااظہار اوردہشت گردی،انتہاء پسندی اورفرقہ واریت کے مکمل خاتمے کے عزم کااعادہ کیا۔ وزیراعلیٰ محمد شہبازشریف نے ا جلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پنجاب میں دہشت گردی،انتہاء پسندی اورفرقہ واریت کے خاتمے کیلئے نیشنل ایکشن پلان کے تحت موثراقدامات کیے جارہے ہیں۔دہشت گردی ،انتہاء پسندی اورفرقہ واریت کے خاتمے کیلئے قوانین کو مزید موثر بنا کرسزاؤں کو سخت کیاگیا ہے ۔نیشنل ایکشن پلان کے تحت کیے جانے والے اقدامات کے مثبت نتائج سامنے آرہے ہیں ۔وزیراعلیٰ نے عوام کے جان ومال کے تحفظ کیلئے سکیورٹی کے انتظامات مزید سخت کرنے کی ہدایت کرتے ہوئے کہا کہ امن عامہ کی فضاء یقینی بنانے کیلئے ہر ضروری اقدام کیا جائے۔انہوں نے کہا کہ پولیس جانفشانی،تندہی اورمحنت سے اپنے فرائض سرانجام دے۔جرائم پیشہ عناصرکی بیخ کنی کیلئے کوئی کسر اٹھا نہ رکھی جائے ۔اجلاس کے شرکاء کو صوبے میں امن عامہ اورنیشنل ایکشن پلان کے تحت اٹھائے گئے اقدامات بارے بریفنگ دی گئی۔اینٹوں کے بھٹوں سے چائلڈ لیبر کے خاتمے کے لئے قائم کردہ سٹیئرنگ کمیٹی کے اجلاس میں اینٹوں کے بھٹوں سے چائلڈ لیبر کے خاتمے کیلئے لیگل فریم ورک کو موثر اور جامع بنانے کا فیصلہ کیا گیا۔ اس ضمن میں آرڈیننس کا اجراء کیا جائے گا۔وزیر اعلی محمد شہباز شریف نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ اینٹوں کے بھٹوں پر چائلڈ لیبرکا خاتمہ کر کے بچوں کو سکولوں میں داخل کرایا جائے گااور انہیں وظیفہ بھی دیا جائے گا۔انہوں نے کہا کہ بھٹوں پر چائلڈ لیبر کے خاتمے کے لئے ضلع کی سطح پر خصوصی کمیٹیاں تشکیل دی جائیں گی ۔ متعلقہ اضلاع کے ڈی سی او زاور ڈی پی اوز ضلعی کمیٹیوں کی کارکردگی مانیٹرکریں گے جبکہ ان ضلعی کمیٹیوں کی ہفتہ وار باقاعدہ میٹنگ ہو گی اورڈی سی اوز اور ڈی پی اوز خود بھی اینٹوں کے بھٹوں کو چیک کرنے کے پابند ہوں گے ۔ وزیر اعلی نے ہدایت کی کہ اینٹوں کے بھٹوں سے چائلڈ لیبر کے خاتمے کے حوالے سے آرڈیننس کے اجراء کے لئے متعلقہ محکمے آرڈیننس کا مسودہ جلد مرتب کر کے پیش کریں ۔ وزیر اعلی نے سیکرٹری صنعت کو ہدایت کی کہ اینٹوں کے بھٹوں کی رجسٹریشن کے لئے سات روز میں رپورٹ پیش کی جائے اورسکولوں میں بچوں کے قیام و طعام کا بھی جائزہ لیا جائے۔بچوں کو طبی سہولتوں کی فراہمی اور ان کے علاج و معالجے کے حوالے سے جامع پروگرام وضع کیا جائے۔دریں اثنا وزیراعلیٰ پنجاب محمد شہباز شریف سے بلوچستان سے تعلق رکھنے والے رکن قومی اسمبلی میر دوستان خان ڈومکی نے ایوان وزیراعلیٰ میں ملاقات کی۔ وزیراعلیٰ محمد شہباز شریف نے اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ موجودہ حالات میں اتحاد اور اتفاق کی ضرورت پہلے سے کہیں زیادہ بڑھ گئی ہے ۔ پاکستان ہم سب کا ہے اور ہم نے مل کر اس کو سنوارنا ہے۔ انہوں نے کہا کہ بلوچستان کے عوام محب وطن اور محنتی ہیں اور پاکستان کی ترقی اور خوشحالی بلوچستان سے جڑی ہوئی ہے۔ وزیراعظم محمد نواز شریف کی قیادت میں بلوچستان کے عوام کی خوشحالی کیلئے دور رس اقدامات کئے جا رہے ہیں۔پنجاب کے تعلیمی پروگراموں میں سندھ، خیبرپختونخوا، بلوچستان، آزاد کشمیر، گلگت بلتستان کے طلبا و طالبات کو بھی شامل کیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب حکومت کے اس اقدام سے قومی یکجہتی اور بھائی چارے کو فروغ ملا ہے۔ رکن قومی اسمبلی میر دوستان خان ڈومکی نے اس موقع گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ وزیراعلیٰ شہباز شریف نے بین الصوبائی ہم آہنگی کے فروغ کے لئے عملی اقدامات کئے ہیں۔شہباز شریف صوبے کے عوام کے معیار زندگی کو بلند کرنے کیلئے شاندار پروگرام پر عمل پیرا ہیں۔

مزید : صفحہ اول