گورنر خیبر پختونخوا نے باڑہ بازار کو کھولنے کا اعلان کر دیا

گورنر خیبر پختونخوا نے باڑہ بازار کو کھولنے کا اعلان کر دیا

پشاور(این این آئی)گورنرخیبرپختونخواسردار مہتاب احمدخان نے تاریخی باڑہ بازار کے کھولنے کا اعلان کرتے ہوئے کہاہے کہ بازار میں باقاعدہ کاروباری سرگرمیاں یکم فروری سے شروع کردی جائیں گی۔ سپاہ قبائل کی واپسی کا عمل 12 جنوری سے شروع ہوجائیگا ۔ باڑہ میں 1600 کنال پر مشتمل جدید انڈسٹریل اسٹیٹ قائم کیاجائیگاجس سے خطے کی تقدیر بدل جائیگی۔ ملکی امن واستحکام کی خاطر قربانیاں دینے والے قبائلی عوام کو مل جل کر اس امن کی حفاظت کرناہوگی۔ انہوں نے کہاکہ جو ٹی ڈی پیز اپنے اپنے علاقوں کو واپس جاچکے ہیں انہیں 2 ارب روپے کی نقد امداد فراہم کی جاچکی ہے۔ سیکورٹی فورسز اورقبائلی عوام کی قربانیوں کی بدولت ہم امن واستحکام کے نئے دورمیں داخل ہورہے ہیں اور جامع منصوبہ بندی کے تحت ترقیاتی عمل شروع کیاگیا ہے۔انہوں نے کہاکہ خطے میں پائیدارامن و امان ٹی ڈی پیز کی باعزت، مکمل اور جلد بحالی وزیر اعظم نواز شریف اور حکومت کی اولین ترجیح ہے۔ انہوں نے کہاکہ باڑہ میں تجارتی سرگرمیوں کے فروغ سے نہ صرف عسکریت پسندی کا خاتمہ ہوگا بلکہ تجارتی سرگرمیوں کے ایک نئے دور کا آغاز ہوگااور معیشت میں بہتری آئیگی۔ وہ پیرکے روز خیبرایجنسی کی تحصیل باڑہ میں شہری سہولیات کی فراہمی کیلئے میونسپل کمیٹی کے افتتاح کے موقع پرمنعقدہ ایک تقریب سے خطاب کررہے تھے۔ تقریب میں خیبرایجنسی کے اراکین اسمبلی ناصرخان آفریدی اور حاجی شاہ جی گل آفریدی، سینیٹر مومن خان جبکہ سابق ایم این اے نورالحق قادری، سابق ایم این اے ملک عبدالرزاق ، ایڈیشنل چیف سیکرٹری فاٹامحمداسلم کمبوہ، قبائلی زعماء، پولیٹیکل ایجنٹ خیبرایجنسی اور سول وملٹری حکام بھی شریک تھے۔اس موقع پر گورنرنے باڑہ تحصیل میں شہری سہولیات کی فراہمی کیلئے میونسپل سروسز کا بھی افتتاح کیا۔ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے گورنرنے کہاکہ باڑہ بازار کو بین الاقوامی سرحد طورخم سے ملانے کیلیے 1.1 ارب روپے کی لاگت سے متنی تا تختہ بیگ، بائی پاس روڈ بھی بنایا جارہا ہے جس سے نہ صرف اس بازار تک بین الاقوامی سطح پر ٹریڈرز کی وسطی ایشیاء رسائی ممکن ہو گی بلکہ تک اس علاقے کی اقتصادی ترقی کے ساتھ ساتھ کاروبار کے مواقعوں میں بھی بہتری آئے گی اور کاروباری سرگرمیوں کو بھی فروغ ملے گا۔

باڑہ بازار

مزید : علاقائی