سعودی وایرانی حکمران عقل سے کام لیکر سفارتی تعلقات بحال کریں ،حامد موسوی

سعودی وایرانی حکمران عقل سے کام لیکر سفارتی تعلقات بحال کریں ،حامد موسوی

اسلام آباد(جنرل رپورٹر)سپریم شیعہ علماء بورڈ کے سرپرست اعلی و تحریک نفاذ فقہ جعفریہ کے سربراہ آغا سید حامد علی شاہ موسوی نے کہاہے کہ مشرق وسطی اورجنوبی ایشاء کوامن کاگہوارہ بنانے کیلئے فلسطین وکشمیرکے مسائل اقوام متحدہ کی قراردادوں کے مطابق حل ہوناشرط اولین ہے بصورت دیگربحرانوں اورجنگ وجدال کاخاتمہ ناممکن ہے ، سعودی عالم دین شیخ باقرالنمرکوشاہی خاندان کی پالیسیوں پرتنقیداوراقلیتوں بشمول شیعہ مکتب فکرکے حقوق کیلئے آوازبلندکرنے کی پاداش میں سزائے موت دی گئی جسکی پوری دنیامذمت کررہی ہے ،ایران میں سعودی سفارت خانے پرحملہ قابل مذمت ہے جوویانامعاہدے کی شق نمبر2 کے منافی ہے اسی لئے ایرانی صدرنے بھی اس کاروائی کی مذمت کی ہے ،ایران وسعودیہ کے حکمران عقل ودانش سے کام لیتے ہوئے سفارتی تعلقات بحال کریں ، کیونکہ سعودی عرب کی جانب سے ایران کیساتھ سفارتی تعلقات منقطع کرنے سے عالمی استعماراوریہودوہنودخوش ہوسکتے ہیں ، حکومت سعودیہ آیۃ اللہ نمراورانکے ساتھیوں کی لاشیں ورثاء کے حوالے کرے ، نقصانات کی تلافی کی جائے ، جیلوں میں بندبیگناہو ں کورہاکیاجائے اورعوام کوازادی رائے کاحق دیاجائے ،ہم نہ سعودی پٹھو ہیں اورنہ ایرانی آلہ کاربلکہ ہمیں اسلام کی سربلندی ، عوام کی بھلائی اورپاکستان کی عزت وحرمت مقدم ہے ، کسی اجلاس اورمشاورت کے بغیر34ملکی اتحادمسلمانوں مزیدتقسیم کرنے کیلئے بنایاگیاہے ، عرب لیگ اوراوآئی سی کی موجودگی میں مزیدکسی اتحادکی ضرورت نہیں اگراوآئی سی میں غیرت ہے توفوری طورپراجلاس طلب کرکے مسلمانوں کوتقسیم کرنے کی سازش کوروکے اورعالم اسلام کے مسائل حل کرے۔ ان خیالات اظہارانہوں نے سوموارکوشہیدآیۃ اللہ باقرالنمرکی سزائے موت کے سہ روزہ سوگ کے اختتام پرمجلس ترحیم سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ آقای موسوی نے باورکرایاکہ کسی ملک میں رونماہونے والے حادثے یاسانحہ کاملبہ مسلمانوں خاص کرپاکستان پرڈال دیاجاتاہے ، مودی کے حالیہ ہنگامی دورہ پاکستان کے موقع پروزیراعظم نے انہیں مکمل پروٹوکول دیامگرپاکستان کوتنہاکرنے کی خواہش میں مرے جارہے ہیں اوران کادورہ پاکستان جن قوتوں کواچھانہیں لگاوہی بھارتی پٹھان کوٹ ائیربیس حملے میں ملوث ہیں ۔آقای موسوی نے کہاکہ 1916میں پہلی جنگ عظیم اورخلافت عثمانیہ کے خاتمے کے بعدبرطانوی وفرانسیسی وزرائے خارجہ کے خفیہ معاہدئے میں مشرق وسطی کے حصے بخرے کرنے کاپلان بنایاگیاجس پرعمل درآمدکیلئے مختلف رہنماؤں کومختلف علاقوں کاحکمران بنایاگیاآج اس منصوبے پر پھرعمل ہورہاہے۔ انہوں نے کہاکہ1980کی دہائی سے مسلسل شائع کئے جانے والے نئے نقشوں میں مسلم دنیاکوحالیہ جغرافیائی حدوومیں مزیدبانٹ دیاگیا، اسی بناء پرانڈونیشیاوسوڈان کوتقسیم کیاجاچکاہے اوراب عراق وشام ،لیبیا،ایران ،پاکستان ،یمن ،سعودیہ اوراسی طرح کے مزیدممالک کوتقسیم کرنے پرکام جارہی ہے ۔ انہوں نے کہاکہ مشرق وسطی میں خانہ جنگی وخون ریزی ایک عرصہ سے بڑھتی چلی جارہی ہے ۔ دوسری جانب فلسطین پرقابض صیہونی قوتوں نے مسجداقصیٰ پربراہ راست قبضہ کیلئے اقدامات شروع کردیئے ہیں جہاں یہودی عبادت کے اہتمام کااعلان کردیاگیاہے یہی وجہ ہے کہ اسرائیلی یہودیوں کی مددکررہے ہیں اورکوئی دن فلسطینیوں کی شہادتوں سے خالی نہیں ۔ انہوں نے کہاکہ تیسری جانب مصرمیں سینکڑوں بیگناہوں کو موت اورعمرقیدکی سزائیں دی جارہی ہیں، مجموعی طورپربیس ہزار سے زائدسیاسی قیدی جیلوں میں موت وحیات کی کشمکش میں ہیں ، 41ہزارقیدی جیلوں میں گل سڑرہے ہیں ، اسی میانمارمیں مسلمانون پرعرصہ حیات تنگ ہے ، ایسے مظالم ڈھائے جارہے ہیں کہ انہیں سن کررونگٹے کھڑے ہوجاتے ہیں ، اسی طرح بنگلہ دیش کے حالات اس سے زیاداہ گھمبیرہیں ، تھوڑاعرصہ پہلے پاکستان سے محبت کی پاداش میں بنگلہ دیشی مسلمانون کوپھانسی پرچڑھادیاگیا، یہ سب ہندوبنیے کے ایماء پرکیاجارہاہے جبکہ مشرق وسطی میں یہودکے اشاروں پرکام کیاجارہاہے غرضیکہ پوراعالم اسلام جنگ وجدال قتل و قتال کاشکارہیں ،مسلم حکمران دیگرمسلم ممالک کیخلاف استعماری پٹھوؤں کاکرداراداکررہے ہیں لہذاایسے وقت میں خودکومسلمانوں کی قیادت کااہل سمجھنے والابرادرملک سعودی عرب اپنے عوام کی بھلائی کی فکرکرے جہاں ظلم وبربریت کے ڈیرے ہیں ، صرف 2014میں 157افرادکوتختہ دارپرلٹکایاگیاآئے دن شہریوں کے سرقلم کردئیے جاتے ہیں لیکن این جی اوزسمیت تمام بڑے ادارے خاموش ہیں ، حقوق کیلئے آوازبلندکرنے اورحکومت پرتنقیدکرنے والوں پردہشت گردکالیبل لگادیاجاتاہے حال ہی میں 47افرادکے سرقلم کرکے ان پردہشت گردی کاالزام دھردیاگیاجن میں مذہبی اسکالرشیخ باقرالنمربھی شامل ہیں جنہیں کلمہ حق کہنے کی سزادی گئی جونہایت افسوسناک اورقابل مذمت ہے ۔ قائدملت جعفریہ آغاسیدحامدعلی شاموسوی نے عالمی اداروں اورتحفظ حقوق بشرکے دعویداروں سے مطالبہ کیاکہ وہ جبرناروااورظلم بربریت کاارتکاب کرنے والوں کیخلاف فوری کاروائی کریں تاکہ مظلومین امان مل سکے۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر