بھٹو کے فلسفہ پر جمہوریت کی بقاء کیلئے جدوجہد کرتے رینگے، گیلانی

بھٹو کے فلسفہ پر جمہوریت کی بقاء کیلئے جدوجہد کرتے رینگے، گیلانی

ملتان (سٹاف رپورٹر) سابق وزیراعظم سید یوسف رضا گیلانی نے کہا ہے کہ با نی پاکستان قائد اعظم محمد علی جناح ؒ کے بعد ذوالفقار علی بھٹو برصغیر پاک و ہند کے سب سے بڑے لیڈر اور آج بھی ان کا کوئی ثانی نہیں ہے جنہوں نے نہ صرف ملک میں بلکہ عالمی پیمانے پر شہرت حاصل کی اور وہ بین الاقوامی سطح پر مستند لیڈر تھے انہوں نے ثابت کیا کہ اسلامی دنیا کے مسائل ایک جگہ پر متحد ہو کر حل ہو سکتے ہیں ان خیالات کا اظہار انہوں نے گذشتہ روز ذوالفقار علی بھٹو کی 87ویں سالگرہ کے سلسلے میں اپنے پیغام میں کیا ۔سید یوسف رضا گیلانی نے مزید کہا کہ ذوالفقار علی بھٹو وہ شخصیت تھے جنہوں نے 1973کا متفقہ آئین دیا اور پاکستان کے دفاع کو مضبوط کرنے کے لئے نیو کلیئر پاور دی ذوالفقار علی بھٹو کے بعد بے نظیر بھٹو نے بھی یہ خلاء پر کرنے کی کوشش کی لیکن انہیں بھی راستے سے ہٹا دیا گیا ۔انہوں نے کہا کہ پیپلز پارٹی فیڈریشن کی علامت ہے ۔ آج کے دور میں پیپلز پارٹی کو عام لوگ کمزور پارٹی سمجھتے ہیں اور تمام جماعتوں کو آزما چکے ہیں اگر ان جماعتوں کو نہ آزما تے تو پھر ان کی حسرت رہ جاتی یہی وجہ ہے کہ آج ہر آدمی کہتا ہے کہ ہم نے عمران خان اور (ن ) لیگ کو دیکھ لیا ہے انہوں نے کہا کہ عوامی فلاح اور آئین کی بحالی کا کام پیپلز پارٹی نے کیا ہے ذوالفقار علی بھٹو نے 1973کے آئین کو اصل شکل میں بحال کیا انہوں نے کہا کہ شہید ذوالفقار علی بھٹو اور محترمہ بے نظیر بھٹو کے ویژن پر پیپلز پارٹی پاکستان کے استحکام کی سالمیت اور جمہوریت کی بقاء کے لئے جدو جہد جاری رکھے گی ۔

مزید : ملتان صفحہ اول