درجنوں لوگوں کو سزائے موت دینے کے بعد سعودی عرب کے سامنے ایک اور ایسی انوکھی مشکل کھڑی ہوگئی جس کے بارے میں کسی نے بھی نہ سوچا تھا

درجنوں لوگوں کو سزائے موت دینے کے بعد سعودی عرب کے سامنے ایک اور ایسی انوکھی ...
درجنوں لوگوں کو سزائے موت دینے کے بعد سعودی عرب کے سامنے ایک اور ایسی انوکھی مشکل کھڑی ہوگئی جس کے بارے میں کسی نے بھی نہ سوچا تھا

  

ریاض (مانیٹرنگ ڈیسک) سعودی عرب میں شیعہ سکالر شیخ نمر النمر سمیت 47 افرادکو سزائے موت دئیے جانے کے دو دن بعد سعودی عرب کی حساس ترین سرکاری ویب سائٹوں پر ایک بڑا ہیکنگ حملہ کیا گیا، جس کے نتیجے میں بعض اہم ترین ویب سائٹیں 24 گھنٹے سے بھی زائد دورانیے کے لئے آف لائن رہیں۔

نیوز سائٹ ’انٹرنیشنل بزنس ٹائمز‘ کے مطابق سعودی وزارت دفاع کی ویب سائٹ پر ڈسٹری بیوٹڈ ڈینائل آف سروس (ڈی ڈی او ایس) حملہ کیا گیا۔ اس نوعیت کے ہیکنگ حملوں میں ٹارگٹ ویب سائٹ پر بے پناہ انٹرنیٹ ٹریفک کا دباﺅ ڈالا جاتا ہے جس کی وجہ سے اس کا نظام معطل ہوجاتا ہے۔ ہیکنگ حملے کا نشانہ بنے والی دیگر ویب سائٹوں میں وزارت خزانہ، کسٹمز سروس، جنرل پاسپورٹ سروس اور سعودی محتسب کے دفاتر کی ویب سائٹیں شامل ہیں۔

مزید جانئے: سعودی عرب میں سزائے موت پانے والے شیخ نمر کی زندگی کے بارے میں وہ تمام باتیں جو آپ جاننا چاہتے ہیں

ایران کی فارس نیوز ایجنسی کا کہنا ہے کہ ہیکنگ حملے ”بریو یوتھ اگینسٹ ریلیجیئس اینڈ ہولی ٹیبوز“ نامی گروپ کی طرف سے کئے گئے ہیں، جبکہ انٹرنیٹ پر سرگرم مشہور ہیکنگ گروپ انانیمس نے بھی ان حملوں کی ذمہ داری قبول کی ہے، اور انہیں ”آپریشن نمر“ کے نام سے کئے جانے والے ہیکنگ حملوں کا حصہ قرار دیا ہے۔

مزید : بین الاقوامی