لوکل گورنمنٹ اکاؤنٹس رولز2016ء، منتخب بلدیاتی نمائندے مالی اختیارات سے محروم

لوکل گورنمنٹ اکاؤنٹس رولز2016ء، منتخب بلدیاتی نمائندے مالی اختیارات سے محروم

ملتان (خبرنگار)لوکل گورنمنٹ پنجاب کے اکاونٹس رولز 2016کے تحت میونسپل کارپوریشن اور ضلع کونسل کے منتخب نمائندوں کے پاس مالی اختیارات نہیں ہوں گے 50ہزار روپے (بقیہ نمبر24صفحہ12پر )

کے بل کو پاس کرنے کا اختیار ڈی او فنانس /میونسپل فنانس آفیسر اور اکاونٹ آفیسر کو دیا گیا ہے دونوں افسران کید ستخط ہونا لازمی ہوں گے جبکہ 50ہزار سے زائد کے بل کو پاس کرنے کا اختیار چیف آفیسر کو دیا گیا ہے لیکن اس پر چیف آفیسر کے ساتھ ساتھ مذکورہ دونوں آفیسران کے دستخط ہوں گے جبکہ میئر اور چیئرمین ضلع کونسل کے پاس ترقیاتی سکیموں کی منظوری ہاوس سے پاس شدہ قرارداوں پر عمل درآ?مد کرانے کے اختیاراں ہوں گے کوئی ترقیاتی سکیم کا کوئی اور منصوبہ ان کی منظوری کے بغیر شروع بھی ہو سکے گا۔ بیوروکریسی نے بلدیات کے نئے سیٹ اپ میں اختیارات نہ ملنے پر حکومت سے احتجاج کیا جس پر حکومت نے تمام مالی اختیارات دیکر خوش کردیا جبکہ دوسری جانب منتخب ہونے والے سیاسی نمائندوں کو یہ کہہ کر راضی کر لیا ہے کہ مالی اختیارات نہ ہونے کی وجہ سے ان کے مسائل کم ہو جائیں گے کسی غلط کام یا مالی خرد برد جیسے کیسوں سے وہ بری الزمہ ہو جائیں گے تاہم بزنس رولز آنے پر اختیارات کا حتمی فیصلہ ہوگا بزنس رولز کی تیاری آخری مراحل میں ہے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...