شہید ذوالفقار علی بھٹو جمہوریت کی علامت تھے، زرداری

شہید ذوالفقار علی بھٹو جمہوریت کی علامت تھے، زرداری

اسلام آباد(خصو صی رپورٹ) سابق صدرِ اور پیپلز پارٹی پارلیمنٹیرینز کے صدر آصف علی زرداری نے شہید ذوالفقار علی بھٹو کے 88ویں یوم پیدائش کے موقع پر عوام بالخصوص نوجوانوں سے کہا ہے کہ وہ مذہبی جنونیوں اور انتہاپسندوں کی سازشوں کو ختم کرنے کے لئے آپس میں اتحاد پیدا کریں کیونکہ یہ مذہبی انتہاپسند ریاست اور ملک کے جمہوری ڈھانچے کو تباہ کرنے کے درپے ہیں ۔ یہ شہید ذوالفقار علی بھٹو ہی تھے جنہوں نے ملک کو اور اس کے جمہوری ڈھانچے کو مستحکم کرنے کے لئے انتھک محنت کی اور اپنی جان ملک اور جمہوریت کے لئے قربان کر دی۔ سابق صدر نے کہا کہ اس سال شہید ذوالفقار علی بھٹو کے یوم پیدائش پر عوام کا اتحاد ہی انہیں خراج عقیدت پیش کرنے کا بہترین طریقہ ہے۔ شہید ذوالفقار علی بھٹو جمہوریت کی علامت تھے اور وہ عوام کی طاقت پر پختہ یقین رکھتے تھے۔ انہوں نے کہا کہ کچھ لوگوں کی ناقابلیت اور اقتدار میں آنے کی لالچ میں عوام کے اختیارات چرا کر غیرمنتخب افراد اور اداروں کو دے دیئے۔ عوام کی طاقت پر یہ حملہ اور ریاست اور عوام کے درمیان تعلق کو دوبارہ رقم کرنے کی وجہ سے سنگین مضمرات ہو تے ہیں اور انہیں ہر صورت میں روکنا چاہیے۔ پارٹی کے کارکن اور جمہوریت سے محبت کرنے والے تمام لوگوں کو چاہیے کہ وہ اس بارے سنجیدگی سے غور و خوض کریں اور بگڑی ہوئی صورتحال کو درست کریں اور اس میں تاخیر نہ ہونے دیں۔ آصف علی زرداری نے کہا کہ شہید ذوالفقار علی بھٹو ایک جانب عوام کی طاقت کی علامت تھے اور دوسری جانب ڈکٹیٹرشپ اور ظلم کے خلاف مذاحمت کا کردار تھے۔ جمہوریت اور عوام کی طاقت کے لئے کھڑا ہونے کی آج جتنی ضرورت ہے اتنی پہلے کبھی نہیں تھی۔ شہید ذوالفقار علی بھٹو نے ملک کو سیاسی طور پر مستحکم کیا اور ایک متفقہ آئین دیا۔ اس کے ساتھ ساتھ انہوں نے بیرونی خطرات سے نمٹنے کے لئے افواج پاکستان کو بھی مستحکم کیا۔ انہی خدمات کے عوض انہوں نے تاریخ میں اپنی جگہ بنالی اور تاریخ میں ان کی یہ جگہ کوئی نہیں لے سکے گا۔ آج اس موقع پر ہم پارٹی کے ان تمام لیڈروں اور کارکنوں کو بھی خراج عقیدت پیش کرتے ہیں جنہوں نے جمہوریت اور عوام کی طاقت کے لئے تاریخی جدوجہد کے دوران عظیم قربانیاں پیش کیں۔

مزید : صفحہ آخر


loading...