استنبول، پولیس کا چھاپہ، تاوان کے لئے اغوا کئے گئے گوجرانوالہ کے 6نوجوان بازیاب

استنبول، پولیس کا چھاپہ، تاوان کے لئے اغوا کئے گئے گوجرانوالہ کے 6نوجوان ...

استنبول( مانیٹرنگ ڈیسک) گوجرانوالہ کے حافظ آباد روڈ پر ایک ہی محلے کے رہائش پذیر چھ نوجوانوں کو استبول کے علاقے عثمان پاشا میں کارروائی کرتے ہوئے افغان گینگ کے چنگل سے بازیاب کرا لیا گیا۔ ایف آئی اے اغوا کاروں کے تین ساتھیوں کو گوجرانوالہ سے پہلے ہی گرفتار کر چکی ہے۔ مغوی نوجوانوں کے پاکستان میں مقیم اہل خانہ کی درخواست پر ایف آئی اے حرکت میں آئی اور سفارتی سطح پر رابطے کئے گئے جس پر استنبول کی مقامی پولیس نے ایک خفیہ جگہ پر چھاپہ مار کر نوجوانوں کو بازیاب کروا لیا۔ پاکستانی سفارتخانے کے پریس اتاشی عبدالکبر نے بھی نوجوانوں کی بازیابی کی تصدیق کر دی جس پر لواحقین کے چہرے کھل اٹھے ۔ایف آئی اے کے مطابق ایجنٹ افضال نے ترکی میں سیف ہاؤس بنا رکھا ہے اور اس کا کارندہ لقمان ہے جو اس کا سہولت کار ہے۔میڈیا رپورٹس کے مطابق افغان گینگ نے استنبول پہنچنے پر نہ صرف پاکستانی نوجوانو ں کو اغوا کر لیا بلکہ ان پر تشدد بھی کرتے رہے اوربھاری تاوان کے لئے ان پر تشدد کی ویڈیوز پاکستان میں ان ایجنٹوں کو بھیجی گئیں جنہوں نے انہیں ویزا لگو ا کر ترکی بجھوایا تھا اور پھر وہی مقامی ایجنٹ مغوی نوجوانوں کے اہل خانہ سے رابطے میں تھے کہ کسی طرح تاوان ادا کر کے ان کی جان خلاصی کروائیں ورنہ افغان گینگ ان کے سر قلم کر دے گا۔مقامی ایجنٹوں نے مغوی نوجوانوں کے اہل خانہ کو میڈیا یا حکومتی اداروں سے دور رکھنے کی بھی باربار تلقین بھی کی تھی۔اہل خانہ سے رہائی کے لئے لاکھوں روپے تاوان مانگا جا رہا تھا۔ بازیاب ہونے والے نوجوان عابد کے والدنے بتایاکہ ایک لاکھ تیس ہزار روپے کے عوض بچوں کوایک رشتہ دار ایجنٹ کے ذریعے ایک ہفتے میں ترکی پہنچایاگیاجہاں کئی دن تک کام نہیں ملا اور وہ ایجنٹ کے ساتھ ہی مقیم رہے جہاں افغان گروہ کے ہتھے چڑھ گئے ۔انہوں نے بتایاکہ کرائے پر ر ہتے ہیں اور اغوا کاروں نے 80لاکھ روپے تاوان طلب کیااور کہاکہ ہنڈی کے ذریعے رقم استنبول بھجوائیں ۔ایک سوال کے جواب میں عابد کے والد نے بتایاکہ وہاں بھیجنے والے ایجنٹ ہی ان کے پاس ویڈیوز لے کرآئے ہیں ، یہ دسمبر کی 10تاریخ تھی ، ایک دن وہ ہمارے گھر آئے اور اگلے دن پتہ چلاکہ بچے اغواء ہوگئے ہیں، ایجنٹوں میں سہیل اور نبیل شامل ہیں ۔ نجی ٹی وی چینل کے مطابق ایجنٹ ہی ڈبل ایجنٹ تھے جو اغواء کاروں کیساتھ بھی ملے ہوئے تھے اور ان کی طرف سے پاکستان میں متاثرہ فیملیز کیساتھ یہی ایجنٹ ہی لین دین کی بات آگے بڑھاتے رہے لیکن جب معاملات طے ہوتے دکھائی نہیں دیاتو میڈیا کو اطلاع کردی جبکہ مغوی عابد کے کزن عامررشید کی درخواست پر پولیس نے مقدمہ بھی درج کرلیا۔

مغوی بازیاب

مزید : صفحہ آخر


loading...