وزیر داخلہ کالعدم جماعتوں کے سرپرست ہیں ،نثار کھوڑو

وزیر داخلہ کالعدم جماعتوں کے سرپرست ہیں ،نثار کھوڑو

کراچی (اسٹاف رپورٹر)پیپلزپارٹی سندھ کے صدر اور صوبائی وزیر نثار احمد کھوڑو نے کہا ہے کہ نیشنل ایکشن پلان اور فوجی عدالتوں کے مدت میں توسیع کا فیصلہ پارلیمنٹ نے کرنا ہے ،وفاقی وزیر داخلہ کالعدم جماعتوں کی پشت پناہی کر رہے ہیں ۔پیپلزپارٹی کو خیرباد کہنے والوں کی سیاسی شناخت ختم ہوگئی ہے ۔یہ حقیقت ثابت ہوگئی کہ پیپلز پارٹی ہی عوامی پارٹی ہے ۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے بدھ کو اپنی رہائش گاہ پر سابق وزیراعلیٰ سندھ لیاقت علی جتوئی کے قریبی ساتھی سرتاج خان لغاری کی پیپلزپارٹی میں شمولیت کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔اس موقع پر وزیراعلی سندھ کے معاون خصوصی سید غلام شاہ جیلانی ۔ایم این اے رفیق احمد جمالی اور ایم پی اے سجیلا لغاری بھی موجود تھے ۔نثار احمد کھوڑو نے کہا کہ ابتدا میں قومی ایکشن پلان پر تیز ی سے عملدرآمد ہوا لیکن بعدمیں ایکشن پلان کے بعض نکات پر عمل نہیں ہورہاہے۔انہوں نے کہاکہ پیپلزپارٹی نے آئین میں کوئی گنجائش نہ ہونے کے باوجود فوجی عدالتوں کی حمایت کی تاہم فوجی عدالتوں کی سزاؤں پر عمل نہیں ہورہاہے۔قومی ایکشن پلان اور فوجی عدالتوں کی مدت میں توسیع ہوگی یا نہیں یہ فیصلہ تمام جماعتوں کو ملکر کرنا ہے ۔ایک سوال کے جواب میں نثار کھوڑو نے کہاکہ چوہدری نثارعلی خان اور وفاقی حکومت کالعدم تنظیموں کی پشت پناہی کر رہی ہے ،اگر وفاقی حکومت کا ایسا سلسلہ جاری رہا تو رجعت پسندی اور منفی سوچ کبھی ختم نہیں ہوگی،کراچی میں اسٹریٹ کرائم،غیر قانونی اسلحے کے موجودگی اور منشیات کی روک تھام کے لئے اب بھرپور کارروائی کی ضرورت ہے۔انہوں نے کہا کہ لیاقت جتوئی کی اپنی کوئی حیثیت نہیں جس وجہ سے وہ پی پی کا مقابلہ نہیں۔ کرسکے ،دادو سے جتوئی گروپ چھوڑ کر آنے والے ہمارے لئے اہم ہیں۔انہوں نے کہا کہ پیپلزپارٹی کو خیرباد کہنے والوں کی سیاسی شناخت ختم ہوگئی ہے ۔یہ حقیقت ثابت ہوگئی کہ پیپلز پارٹی ہی عوامی پارٹی ہے ۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر


loading...