ایل پی جی کا غیر قانونی دھندہ عروج پر ، متعلقہ ادارے خاموش ، شہریوں کی زندگیاں خطرے سے دوچار

ایل پی جی کا غیر قانونی دھندہ عروج پر ، متعلقہ ادارے خاموش ، شہریوں کی ...

لاہور(جنرل رپورٹر)صوبائی دارلحکومت گیس کے سلنڈروں کی ری فلنگ کی دکانیں خطرناک صورتحال اختیار کر گئیںیہ دکانیں کسی بھی وقت آگ لگنے کے باعث بڑے سانحے کا باعث بن سکتی ہیں ۔قابل ذکر بات یہ ہے کہ 2015میں ضلعی حکومت نے سلنڈر سے سلنڈر گیس کی فلنگ پر پابندی بھی عائد کی اور رہائشی آبادیوں میں گیس کے سلنڈروں کی دکانیں بنانے یا سلنڈروں کی ری فلنگ کو بین کر دیا اور اس کے لئے دفعہ 144عائد کر کے دکانیں اور سلنڈروں کے گودام سیل کر دیئے مگر سلنڈرمافیا نے 2018کے آخری تین ماہ میں دوبارہ رہائشی آبادیوں بس سٹاپو ں ٹرانسپورٹ کے اڈوں اہم چوراہوں کے قرب وجوار میں ایل پی جی اور دیگر گیس سے بھرے ہوئے سلنڈروں کی دکانیں قائم کر لیں اور ری فیلنگ کا دھندہ دوبارہ شروع کر دیا ۔اس وقت شہر کے زونوں کی حدود میں جگہ جگہ سلنڈروں کی ری فیلنگ کی دکانیں اور گودام قائم ہو چکے ہیں اس دھندے کا مرکز چار زون ہیں لیکن سر فہرست راوی زون ،شالاما ،اقبال اور داتا گنج بخش زون ہیں ۔سمن آباد ،واہگہ،عزیز بھٹی ،نشتر اور گلبرگ زون میں بھی یہ دھندہ عروج پر ہے ۔پابندی پر عمل درآمد کا ٹاسک زونوں کے افسروں کو دیا گیا مگر انھوں نے دھندہ کرنے والے مافیا سے ماہانہ طے کر کے اپنی دیہاڑیاں کھری کر لیں ۔اس حوالے سے ڈپٹی کمشنر لاہور صالحہ سعید سے بات کی گئی تو انھوں نے کہا کہ سلنڈروں کی ری فلنگ کا سلسلہ ہر صورت بند کرائیں گے ۔

مزید : میٹروپولیٹن 1


loading...