ٹریفک حادثہ کا شکا ر ہونیوالی نرس کے بچوں کی کفالت کیلئے خصوصی فنڈ قائم

ٹریفک حادثہ کا شکا ر ہونیوالی نرس کے بچوں کی کفالت کیلئے خصوصی فنڈ قائم

لاہور(جنرل رپورٹر) جنرل ہسپتال کی انتظامیہ و نرسنگ سٹاف نے رکشہ الٹنے کے باعث جاں بحق ہونے والی بیوہ نرس زہرہ اختر کے 3بچوں کے تعلیمی اخراجات برداشت کرنے کیلئے خصوصی فنڈ قائم کر دیا ہے۔ جس میں پرنسپل ،میڈیکل سپرنٹنڈنٹ ،نرسنگ سپرنٹنڈنٹ ،ڈاکٹرز اور نرسیں ہر ماہ اپنی مالی استطاعت کے مطابق رقم جمع کرائیں گے تاکہ ان بچوں کو تعلیمی میدان میں کسی مشکلات کا سامنا نہ کرنا پڑے ۔ یہ اعلان پرنسپل پوسٹ گریجویٹ میڈیکل انسٹی ٹیوٹ پروفیسر محمد طیب نے گزشتہ روز نرسنگ ہاسٹل ایل جی ایچ میں مرحومہ کے ایصال ثواب کیلئے منعقدہ تعزیتی اجلاس سے خطاب کے دوران کیا ۔اس موقع پر ایم ایس ڈاکٹر محمود صلاح الدین ، پرنسپل نرسنگ کالج رضیہ بانو، شاہدہ رشید ،ڈپٹی نرسنگ سپرنٹنڈنٹ رقیہ بانو کے علاوہ انتظامی ڈاکٹرز اور نرسنگ سٹاف کی بڑی تعداد موجود تھی پرنسپل نے کہا کہ مرحومہ کی بڑی صاحبزادی کو 18سال کی عمر تک پہنچنے تک نوکری دی جائے گی۔

لاہور جنرل ہسپتال میں قواعد و ضوابط کے مطابق ملازمت دی جائے گی جبکہ متاثرہ خاندان کی مالی و قانونی معاونت کیلئے 4 رکنی کمیٹی تشکیل دے دی جو اس سلسلے میں مکمل رہنمائی کرے گی ۔پرنسپل پروفیسر محمد طیب ، ایم ایس ڈاکٹر محمود صلاح الدین اور رضیہ بانو و دیگر مقررین نے اپنے خطاب میں کہا کہ یتیم بچوں کی مدد کرنا ہمارا مذہبی و اخلاقی فریضہ ہے اور بالخصوص ہم جس شعبے سے منسلک ہیں وہ دکھی انسانیت اور بے سہارا لوگوں کے زخموں پر مرہم رکھنے کی تلقین کرتا ہے ۔ مقررین نے کہا کہ طب کا شعبہ ہر ایک کو نصیب نہیں ہوتا اور نہ ہی سفید کوٹ اور میڈیکل کا یونیفارم کا زیب تن کرنا ہر ایک کا مقدر ہوتا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ زہرہ اختر نے ڈاکٹرز اور نرسز کے شانہ بشانہ خدمات سر انجام دیں اور اپنے فرائض کی بجا آوری کیلئے ہی اپنی جان دے دی ہمیں اُن کے نقش قدم پر چلتے ہوئے زیادہ محنت اور لگن سے مریضوں کی خدمت کرنے کا عہد کرنا ہوگا ،اس موقع پر نرسنگ سٹاف نے اپنی پاکٹ منی سے جمع کردہ خطیر رقم بھی مرحومہ زہرہ اختر کے بچوں کے حوالے کی

مزید : میٹروپولیٹن 1


loading...