یہودیوں کو جائیدادیں فروخت کرنے والے فلسطینی کو امریکہ کے حوالے کرنے کا امکان

یہودیوں کو جائیدادیں فروخت کرنے والے فلسطینی کو امریکہ کے حوالے کرنے کا ...

مقبوضہ بیت المقدس (اے این این )اسرائیل کے عبرانی ذرائع ابلاغ نے (بقیہ نمبر47صفحہ7پر )

انکشاف کیا ہے کہ امریکا کے سخت دباؤ کے بعد فلسطینی اتھارٹی عصام عقل نامی شخص کو رہا کرنے کے بعد امریکا بھیجنے پرغور کررہی ہے جس پر مقبوضہ بیت المقدس میں قومی املاک یہودیوں کو فروخت کرنے یا اس میں معاونت کا الزام عاید کیا گیا ہے۔ رپورٹ میں کہا ہے کہ امریکا کی طرف سے فلسطینی اتھارٹی پر عصام عقل کی رہائی کے لیے مسلسل دباؤ ہے۔ عصام عقل نے بیت المقدس میں ایک اہم سرکاری ملازم کی حیثیت سے کئی قومی نوعیت کی جائیدادیں اوراملاک صہیونیوں کو بیچ ڈالی تھیں۔ حال ہی میں ایک فلسطینی عدالت نے عصام عقل کو عمر قید کی سزا سنائی ہے۔گذشتہ مہینے امریکی حکومت نے فلسطنی اتھارٹی سے مطالبہ کیا تھا کہ وہ بیت المقدس سے گرفتار کیے گئے ان فلسطینیوں کو رہا کرے جو یہودی آباد کاروں کو سرکاری اور محکمہ اوقاف کی املاک کی فروخت کے جرم میں گرفتار کیے گئے ہیں۔اسرائیل میں امریکی سفیر ڈیوڈ فریڈمین نے ایک بیان میں کہا ک امریکی شہریت یافتہ عصام عقل کوفلسطینی حکام نے دو ماہ سے گرفتار کررکھا ہے۔ اس پر القدس کی فلسطینی املاک کو یہودیوں کو خفیہ طورپر فروخت کرنے کا الزام عاید کیا گیا اور اسی الزام کے تحت اسے گرفتار کیا گیا ہے۔ ٹوئٹر پر پوسٹ ایک بیان میں فریڈ مین نے کہا کہ فلسطینی اتھارٹی ہمارے شہر عصام عقل سمیت ان تمام فلسطینیوں کو فوری رہا کرے جنہیں فلسطینی حکام نے فلسطینی املاک یہودیوں کو فروخت کرنے کے جرم میں گرفتار کیاگیا ہے۔

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...