گدون امازئی انڈسٹریل اسٹیٹ کی ترقی میرا مشن ہے، عبدالکریم

گدون امازئی انڈسٹریل اسٹیٹ کی ترقی میرا مشن ہے، عبدالکریم

پشاور( سٹاف رپورٹر)گدون امازئی کے صنعتکاروں اور کارکنوں کی خوشحالی اور فلاح و بہبود کیلئے حکومت تمام ممکن کے اقدامات اٹھائے گی۔ ان خیالات کا اظہار وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا کے معاون خصوصی برائے صنعت و تجارت عبدالکریم نے گدون امازئی مین کلین اینڈ گرین پاکستان شجر کاری مہم کے موقع پر منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا ۔ معاون خصوصی نے مذید کہا کہ صوبائی حکومت صوبے میں صنعتی ترقی کے فروغ کیلئے صنعت کاروں کیلئے سازگار ماحول کی فراہمی کیلئے کو شاں ہے وزیر اعلیٰ کے معاون خصوصی نے انڈسٹریل اسٹیٹ کو درپیش مسائل فوری طور پر حل کرنے کی یقین دہانی بھی کر ائی۔ تقریب میں ڈپٹی کمشنر ، صوابی چیمبر آف کامرس کے عہدیداران اور گدون امازئی انڈسٹریل اسٹیٹ کے ممتاز صنعتکار اور معززین علاقہ نے بھی شرکت کی۔ گدون انڈسٹریل اسٹیٹ کے صنعتکاروں نے معاون خصوصی کا شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ مذکورہ انڈسٹریل اسٹیٹ کو درپیش مسائل کے حل کرنے کیلئے وہ خصوصی دلچسپی لے رہے ہیں۔ تقریب میں اس بات پر زور دیا گیا کہ انڈسٹریل اسٹیٹ کے ارد گرد ماحولیاتی آلودگی پر قابو پانے کیلئے خصوصی توجہ دینی چاہیئے اور اس سلسلے میں دس ہزار پودے لگانے اور 10دن کیلئے خصوصی صفائی مہم کا فیصلہ بھی کیا گیا ۔ آخر میں اسٹیٹ منیجر نے انڈسٹریل اسٹیٹ کا دورہ کرنے پر معاون خصوصی کا شکریہ ادا کیا ۔اس موقع پر معاون خصوصی نے صنعتکاروں اور اسٹیٹ سے وابستہ مزدوروں سے اپنے مسائل پر خصوصی سوال و جواب کا نشست بھی کیا اور فوری طور پر مطالبات حل کرنے کی ضرورت پر زور دیا۔بعدازاں وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا کے معاون خصوصی عبدالکریم نے گدون امازئی انڈسٹریل اسٹیٹ کا تفصیلی دورہ بھی کیااورمختلف یونٹس کے بدورے کے موقع پر معاون خصوصی نے صنعتکاروں پر زور دیا کہ مقامی لوگوں کو زیادہ سے زیادہ روزگار کے مواقع دیئے جائیں ۔ معاون خصوصی نے انڈسٹریل اسٹیٹ کو درپیش مسائل کی فوری طور پر حل کرنے کی یقین دہانی کرتے ہوئے کہا کہ بند یونٹس کو فوری بحال کرنے کیلئے صوبائی حکومت سنجیدہ کوشش کر رہی ہے ۔دورہ کے موقع پر معاون خصوصی کو توانائی کے بحران پر بھی خصوصی بریفنگ دی گئی۔ معاون خصوصی نے اس موقع پر کہا کہ صوبائی حکومت صنعتوں کیلئے ایک جامع پالیسی پر عمل درآمد کر رہی ہے جس کی بدولت صنعتوں کی پیداوار میں اضافہ اور ان کی ضروریات اور تجارت میں بھی آسانی پیدا ہو گی۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...